بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / 70سال کا گند صاف کرنے میں وقت لگے گا ٗ پرویز خٹک

70سال کا گند صاف کرنے میں وقت لگے گا ٗ پرویز خٹک

شاور ۔ وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے شروع دن سے کرپشن کمیشن لوٹ کھسوٹ اقرابا ء پروری کے خاتمے کے لیے آواز اٹھائی اور بھر پور جہاد شروع کیا۔ پورے صوبے کے عوام کو صوبے میں واضح تبدیلی نظر آرہی ہے۔نہ صرف تحریک انصاف بلکہ اپوزیشن جماعتیں بھی صوبائی حکومت کی میرٹ پالیسی تھانہ پٹوار کلچر میں واضح تبدیلی محسوس کررہی ہے۔ صوبائی حکومت اور پارٹی قیادت کواپنے صوبائی وزراء ارکان اسمبلی پر بھر پور اعتماد ہے۔وہ نتھیا گلی سے واپسی پر نوشہرہ میں اخبار نویسیوں سے بات چیت کررہے تھے اس موقع پر صوبائی وزیر اطلاعات شاہ فرمان، صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میاں جمشید الدین کاکاخیل ممبران صوبائی اسمبلی ادریس خٹک اور میاں خلیق الرحمن خٹک بھی موجو دتھے۔

وزیر اعلی پرویز خان نے زرائع ابلاغ کے نمائندوں کے سوالوں کاجواب دیتے ہوئے کہا کہ پارٹی قیادت صوبائی حکومت وزراء ارکان اسمبلی سے بالکل مطمئن ہیں۔ کسی کے خلاف کرپشن کا کوئی الزام نہیں جن کے خلاف الزامات تھے ان کوپارٹی سے نکال دیا ہے آئندہ ٹکٹ اسی فیصد موجودہ ارکان اسمبلی کو ملیں گے۔ اور پارٹی کے چیرمین عمران خان اور پارلیمانی بورڈ اس کاخود فیصلے کریگی۔ا نھوں نے کہا کہ صوبائی احتساب کمیشن نے بلا امتیاز کرپٹ عناصر کا احتساب کیا۔

پارٹی کے تمام اہم فیصلے پی ٹی ائی کے چیرمین عمران خان باہمی مشاورت سے کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے صوبائی اسمبلی کے ذریعے جو قوانین منظور کیے جن میں احتساب کمیشن ، کنفلکیٹ اف انٹرسٹ، رائٹ ٹو انفارمیشن، وسیل بلوئر، ای ٹینڈ رنگ ،حکومت کی میرٹ پالیسی اور این ٹی ایس کے زریعے شفاف بھرتیوں کے پالیسیوں کے ہوتے ہوئے کرپشن کاکوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔کرپشن کا کوئی امکان نہیں ہے ۔ ہمیں اپنے وزرا ء پر بھر پور اعتماد ہے انھوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے ہر طرف سے فل پروف نظام قائم کیا ستر سال کے گند کوصاف کرنے میں وقت لگے گاانشاء اللہ تحریک انصاف دوبارہ برسر اقتدار ائے گی۔ اور اس نظام کو مذید مضبوط کیاجائے گا۔

ہم صوبے کی سیاسی تاریخ بدلنے جارہے ہیں۔اورتاریخ میں پہلی مرتبہ ہر طرف چیک اینڈ بیلنس کا نظام رائج کیا۔ انھوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے پارٹی کے چیرمین عمران خان کے وژن کے مطابق جو اقدامات اٹھائے آج صوبے کے طول وعرض میں دیگر دینی اور سیاسی جماعتوں سے اہم لوگ اور بڑی تعداد میں باشعور کارکن نہ صرف خیبرپختونخوا بلکہ پورے ملک کی سطح پر تحریک انصاف میں جوق در جوق شامل ہورہے ہیں یہ درحقیت خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت اورپی ٹی ائی کے چیرمین عمران خان پر بھر پور اعتماد کامظہر ہے۔

پرویز خٹک نے کہا نوجوان اور کارکن تحریک انصاف کاسرمایہ ہیں۔ تحریک انصاف واحد سیاسی جماعت ہے جس میں باشعور لوگ پارٹی قیادت اور صوبائی حکومت کے ساتھ والہانہ محبت رکھتے ہیں اور نوجوان شوشل میڈیا سمیت ہر فورم پر پارٹی کی بھر پور نمائندگی کررہے ہیں اوریہی وجہ ہے کہ کارکنوں اور تنظیمی عہدیداروں کی شبانہ روز محنت کی وجہ سے پی ٹی ائی اس ملک کی بڑی سیاست قوت بن چکی ہیاو ر پورے ملک کی سطح پر پی ٹی ائی کے چیرمین عمران کو پذیر ائی مل رہی ہے اورنظام کی تبدیلی کاجو سفر عمران خان اور پی ٹی ائی کی صوبائی حکومت نے شروع کیا اس پر پوری قوم کی نظریں ہیں۔اب تک پارٹی کے ہر فورم کور کمیٹی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی ریجنل کمیٹیوں نے صوبائی حکومت کے اقدامات اورکارکردگی پر بھر پور اطمینا ن کااظہا ر کیا اور یہی وجہ ہے اسی فیصد ارکان اسمبلی کو دوبارہ 2018 کے انتخابات میں بھی امیدوار نامزد کیاجائے گایہ فیصلہ خود پارٹی کے چیئرمین عمران خان کریں گے۔

پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت کے اصلاحاتی پروگرام سب کے سامنے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ میں نے اپنے اختیارات کم کرکے اداروں کو بااختیار بنایا۔ خیبرپختونخوا پولیس کی مثالیں پوراپاکستان دے رہا ہے پولیس کو سیاسی مداخلت سے پاک کردیا ہے۔ اور پولیس ایک بااختیار فورس بن چکی ہے،بااختیار انتظامی بورڈ قائم کیے گئے ہیں۔انھوں نے کہ صوبے میں لوڈ شیڈنگ میں اضافہ کاسخت نوٹس لیا۔ اور چیف ایگزیکٹو پیسکوکو خبردار کیا کہ وہ اپنا قبلہ درست کریں اور صوبے کو ملنے والابجلی کو پورا کوٹہ دیں ورنہ عوام مجبور ہو کرپیسکو دفاترکاگھیراؤ کریں جس کی تمام ترذمہ داری پیسکو حکام پر ہوگی ۔