بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / حکمران بتائیں ان کیخلاف سازش کون کر رہا ہے؟ عمران خان

حکمران بتائیں ان کیخلاف سازش کون کر رہا ہے؟ عمران خان

اسلام آباد۔پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت بتائے کہ فوج یا سپریم کورٹ سازش کون کر ہا ہے ن لیگ والے چوری چھپانے کے لیتے آرمی اور عدالت کے پیچھے پڑ گئے ہیں 10جولائی کے بعد عوام سڑکوں پر نکلیں گے پوری قوم سپریم کورٹ کے ساتھ کھڑی ہے اگر انہوں نے سپریم کورٹ کو دھمکیاں دینا بند نہ کیں تو پوری قوم سڑکوں پر نکلے گی قوم ایک کال کے انتظار میں ہے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ بدھ کو ہونے والے ڈرامے کے لیے ضروری ہے کہ اس کی وضاحت کی جائے پاناما لیکس میں صرف پاکستان ہی نہیں بلکہ دنیا بھر کے لوگوں کے نام آئے اور پھر ہر ملک میں تحقیق ہوئی بعض سربراہوں کو تو استعفٰے بھی دینا پڑے نواز شریف اسکی بیٹی اور دو بیٹوں کی تصویر بھی آئی یہ ہم نے شائع نہیں کیں۔

آج بھی آئی سی آئی جے کی ویب سائٹ پر ان کی تصویریں پڑی ہوئی ہیں پانامالیکس میں نام آنے کے بعد تمام اپوزیشن جماعتوں نے ان سے وضاحت کرنے کا کہا مگر انہوں نے وضاحت کی بجائے جھوٹ پر جھوٹ بولنا شروع کر دیا نواز شریف نے پارلیمینٹ میں بھی دستاویزات لہراتے ہوئے دعوٰی کیا کہ ہمارے پاس یہ تمام ثبوت موجود ہیں انہوں نے پہلی دفعہ اعتراف کیا کہ مے فیئر کے فلیٹ انکی ملکیت ہیں حالانکہ اس سے پہلے یہ انکار کر رہے تھے میں نے 1999میں انکے فلیٹ کے باہر مظاہرہ کیا کہ منی لانڈرنگ سے خریدے گئے ہیں جبکہ انہوں نے اس وقت کہا یہ فلیٹس ہمارے نہیں ہیں جب یہ پاناما ان کے مے فیئر کے فلیٹس آ گئے تو پہلی دفعہ وزیر اعظم نے اور انکے بیٹے حسین شریف نے کہا کہ الحمدوللہ یہ فلیٹس ہمارے ہیں اور اس سے پہلے مریم نے بھی ٹی وی پر کہا کہ ہماری پاکستان اور باہر کوئی جائیداد نہیں ہے ۔

جب ساری بات سامنے آئی تو پھر مانے جب ہم نے کہا کہ کمیشن تحقیق کرے تو نواز شریف نے کہا کہ میں خود کمیشن بناؤں گا اور اسے بتاؤں گا کہ آپ نے کیا دیکھنا ہے مگر چیف جسٹس جمالی نے مسترد کر دیا کیا وہ سازش تھی کیا خود مجرم بھی فیصلہ کرتا ہے کہ کس قانون کے تحت اس کا احتساب ہو گا اس کے بعد خواجہ آصف نے کہا کہ میاں صاحب پاناما کو لوگ تھوڑی دیر کے بعد بھول جائیں گے لوگوں کا پیسہ لوٹ کر منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر بھیجا جا رہا ہے اور خواجہ آصف کہتا ہے کہ لوگ بھول جائیں گے تب ہم سڑکوں پر آئے عوام نے سڑکوں پر نکل کر معاملہ سپریم کورٹ میں پہنچایا۔

جب سپریم کورٹ میں گئے تو پتہ چلا کوئی دستاویزات نہیں ہیں سپریم کورٹ میں قطری آگیا سپریم کورت کے پانچ میں سے دو ججوں نے کہا کہ یہ نہ صادق ہے نہ امین ہے جبکہ تین ججوں نے مذید تحقیقات کا حکم دے دیا اور جے آئی ٹی تشکیل دے دی اب جے آئی ٹی کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں بدنام کیا جا رہا ہے حالانکہ جے آئی ٹی کا مطلب سپریم کورٹ ہی ہے پہلے جے آئی ٹی پر خوشیاں منا رہے تھے مٹھائیاں بانٹ رہے تھے اب اسے دھمکی دی جا رہی ہے۔

انہوں نے نے خریدنے کی کوشش کی جب وہ نہیں مانے تو انہیں دھمکیاں دی جا رہی ہیں ان سے پوچھتا ہوں کیا سازش ہے سازش کرنے والے کا نام لیں کیا آپ کے خلاف فوج اور سپریم کورٹ سازش کر رہی ہے انہوں نے صرف سیدھا یہی جواب دینا تھاکمپنی اور فلیٹس کے وہ اصل مالک ہیں یا نہیں انہوں نے ابھی تک دستاویزات نہیں دکھائیں جو دستاویزات سامنے آئی ہیں ان میں بینیفیشری مریم نواز ہیں ایشو بڑا آسان ہے اگر تو آئی سے آئی جے کی ڈاکومنٹ ٹھیک کہہ رہی ہے ان چار محلات کی مالک مریم نواز ہیں اگر مریم ہے تو اس کا مطلب ہے کہ 93میں لیے گئے تھے اگر 93میں لیے گئے تو اس وقت وہ بچے تھے اس کا مطلب ہے کہ نواز شریف کا پیسہ ہے جو چوری کر کے باہر لے گئے اور بچوں کے نام پر خرید لیں ہم حسین شریف کو سامنے لیکر نہیں آئے ۔

یہ خود لیکر آئے ہیں ہم مریم شریف کو سامنے نہیں لائے آئی سی آئی جے میں اس کا نام ہے سیدھا سا ایشو ہے کہ آپ چار محلات کے مالک کا نام بتا دیں اور یہ بتا دیں کہ پیسہ باہر کیسے گیا ہے بجائے یہ بتانے کے انہوں نے سارے ادارے تباہ کیے یہ اب سپریم کورٹ کے پیچھے پڑ گئے ہیں یہ پاکستانی فوج کے پیچھے پڑ گئے ہیں مریم کہتی ہے ہم جمہوریت بچا رہے ہیں کیا اداروں کو تباہ کرنا جمہوریت بچانا ہے جمہوریت تو ڈیوڈ کیمرون نے بچائی جس نے اسمبلی میں آکر ثبوت پیش کر دیے آپ اپنی چوری بچانے کے لیے ملک کو تباہ کر رہے ہیں شکیل الرحمان نواز شریف کو بچانے کی کوشش کر رہا ہے اس پر پیسہ چل رہا ہے صحافیوں پر پیسہ چلا رہے ہیں وکیلوں پر پیسہ چلا رہے ہیں اپنی چوری بچانے کے لیے ملک کا پیسہ چلا رہے ہیں اور کہہ رہے ہیں کہ ہم جمہوریت بچا رہے ہیں میں واضح کرتا ہوں کہ اس وقت ساری قوم تیار ہے ساری قوم ایک کال کی انتظار کر رہی ہے۔