بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / مشال قتل کیس ٗ ملزمان کیخلاف فردجرم عائد نہ ہو سکی

مشال قتل کیس ٗ ملزمان کیخلاف فردجرم عائد نہ ہو سکی


مردان۔مشال قتل کیس میں ریکارڈ کی عدم موجودگی کے باعث ملزمان کے خلاف فرد جرم عائد نہ ہوسکی تفصیلات کے مطابق مشال قتل کیس میں ملزمان کے خلاف فرد جرم عائد کرنے کے لئے کل پانچ جولائی کو گرفتار57 ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں پیش کیا گیا تاہم ریکارڈ مقدمہ ہائی کورٹ میں ہونے کی وجہ سے ملزمان کے خلاف فرد جرم عائد نہ ہوسکی اور اس مقصد کے لئے 15 جولائی کی تاریخ مقرر کردی گئی عدالتی ذرائع کے مطابق مشال کے والد نے کیس کی سماعت مردان سے منتقل کرنے کے لئے پشاور ہائی کورٹ میں درخواست دائر کر رکھی ہے جس کی سماعت کے لئے گیارہ جولائی کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔

اس لئے مقدمہ کے ریکارڈ کو ہائی کورٹ بھیج دیا گیا ہے یاد رہے کہ تیرہ اپریل کو عبدالولی خان یونیورسٹی میں جرنلزم کے طالب علم مشال خان کو توہین مذہب کے الزام میں فائرنگ اور تشدد کرکے قتل کردیا گیا تھا جس کے بعد اس کیس میں 60 افراد ملزمان نامزد کئے گئے تھے جن میں 57 ملزمان کو گرفتار کیا گیا تھا جو اس وقت جیل میں ہیں جبکہ تین ملزمان تاحال روپوش ہیں۔