بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / واجد ضیاء کو تصویر لیک کرنیوالے کا نام بتانے کا حکم

واجد ضیاء کو تصویر لیک کرنیوالے کا نام بتانے کا حکم

اسلام آباد۔سپریم کورٹ نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیا کو ہدایت کی ہے کہ اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کو تصویر لیک کرنے والے کا نام بتایا جائے۔سپریم کورٹ نے پاناما لیکس کیس میں جے آئی ٹی رپورٹ کی سماعت کا حکم نامہ جاری کردیا ہے۔

عدالت عظمیٰ کے حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ تصویر لیکس معاملے پر کمیشن کی تشکیل عدالت کے دائرہ اختیار میں نہیں، وفاقی حکومت چاہے تو معاملے پر خود کارروائی کر سکتی ہے، حکومت نے تصویر لیک کرنے والے کا نام سامنے لانے پر اعتراض نہیں کیا۔

عدالت نے کہا کہ ایس ای سی پی کے چیئرمین ظفر حجازی کیس میں ججز کے ریمارکس ماتحت عدالت کی کارروائی پر اثر انداز نہیں ہونگے، ایف آئی اے نے اپنی رپورٹ میں ظفر حجازی کے خلاف کارروائی کی درخواست کی تھی۔

اس موقع پر عدالت نے جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیا کو تصویر لیک کرنے والے کا نام اٹارنی جنرل کو بتانے کا حکم دیا۔سپریم کورٹ نے جے آئی ٹی ممبران کو تاحکم ثانی سکیورٹی فراہم کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ عدالت کی اجازت کے بغیر کسی جے آئی ٹی ممبر کیخلاف کوئی کارروائی نہیں ہونی چاہیے۔