بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / بھارت نے چین کی ثالثی کی پیشکش مسترد کر دی

بھارت نے چین کی ثالثی کی پیشکش مسترد کر دی


نئی دہلی ۔بھارت نے مسئلہ کشمیر پر چین کی ثالثی کی پیشکش کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ دوطرفہ فریم ورک کے تحت پاکستا ن کے ساتھ مسئلہ کشمیر سمیت تمام معاملات پرمذاکرات کیلئے تیار ہیں تاہم کسی بھی تیسرے فریق کی ثالثی قبول نہیں۔جمعرات کو بھارتی میڈیا کے مطابق وزارت کے ترجمان گوپال بگلے نے ہفتہ وار پریس بریفنگ میں چینی وزارت خارجہ کے ترجمان کے مسئلہ کشمیر اور پاک بھارت کشیدگی کے خاتمے کیلئے ثالثی کی پیشکش سے متعلق بیان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ ہمارا موقف بالکل واضح ہے آپ کومعلوم ہے کہ تمام مسائل کی جڑ سرحد پار دہشتگردی ہے جو ایک مخصوص ملک سے نکلتی ہے اور جو ملک خطے اور دنیا میں امن واستحکام کیلئے ایک خطرہ ہے ۔

ترجمان نے کہاکہ ہم دوطرفہ فریم ورک کے تحت پاکستان کے ساتھ مسئلہ کشمیر پر بات چیت کیلئے تیار ہیں تاہم کسی بھی تیسرے فریق کی ثالثی قبول نہیں ۔واضح رہے کہ چینی وزارت خارجہ کی ترجمان گنگ شوانگ نے میڈیا بریفنگ میں کہا تھاکہ چین بھارت اور پاکستان کے تعلقات بہتر کرنے کے لیے ‘اپنا تعمیری کردار’ ادا کرنے کے لیے تیار ہے۔چین کی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ کشمیر کی صورت حال اتنی کشیدہ ہے کہ اب بین الاقوامی برادری کی توجہ اس کی طرف مبذول ہونے لگی ہے۔کنٹرول لائن پر دونوں ملکوں کے درمیان جس طرح کا ٹکرا ہو رہا ہے اس نے صرف دونوں ملکوں کا امن و استحکام خطرے میں پڑے گا، بلکہ یہ کشیدگی پورے خطے پر اثر انداز ہوگی۔چینی وزارت خارجہ کی ترجمان نے امید ظاہر کی کہ دونوں ممالک ایسے اقدامات کریں گے جن سے کشیدگی کم کرنے اور خطے میں امن و استحکام کے قیام میں مدد ملے گی۔