بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / وقت آچکا ہے تمام حقیقی مسلم لیگی متحد ہوجائیں‘ چوہدری شجاعت حسین

وقت آچکا ہے تمام حقیقی مسلم لیگی متحد ہوجائیں‘ چوہدری شجاعت حسین

اسلام آباد ۔ مسلم لیگ (ق) کے صدر چوہدری شجاعت حسین اور پنجاب کے صدر چوہدری پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ وقت آچکا ہے کہ تمام حقیقی مسلم لیگی متحد ہوجائیں‘ اتحاد سے متعلق آئندہ چند دنوں میں اہم فیصلے کریں گے‘ نواز شریف کے جانے سے جمہوریت زیادہ بہتر طریقے سے چلے گی‘ جمہوریت کوئی پارٹی نہیں جیسے نواز شریف نے رجسٹرڈ کرایا ہو‘ اگر نظام کو کچھ ہوا تو ذمہ دار نواز شریف اور اس کے چند ساتھی ہوں گے۔

(ن) لیگ جب پکڑی جاتی ہے جمہوریت کی آڑ میں چھپ جاتی ہے‘ (ن) لیگ نے دس دس سال میں ڈرامے بازی کے علاوہ پنجاب میں کیا گیا؟ حکومت نے غریب عوام کی بھلائی کے لئے کوئی کام نہیں کیا ‘ (ن) لیگ میں جانے والے واپس آجائیں ہمارے دروازے کھلے ہیں‘ کلبھوشن کے معاملے پر نواز شریف کچھ نہیں بولے۔ اتوار کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری شجاعت حسین نے کہا کہ وقت آچکا ہے کہ تمام حقیقی مسلم لیگی متحد ہوجائیں۔

انہوں نے کہا کہ متحدہ مسلم لیگ سے متعلق آئندہ چند دنوں میں اہم فیصلے کریں گے۔ اس سلسلے میں بلوچستان ‘ سندھ اور فاٹا کا دورہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ امید ہے پانامہ کیس کا فیصلہ ملک و قوم کے مفاد میں آئے گا۔ اس موقع پر چوہدری پرویز الٰہی نے کہا کہ (ن) لیگ جب پکڑی جاتی ہے جمہوریت کی آڑ میں چھپ جاتی ہے اداروں پر کیچڑ اچھالا جارہا ہے پانامہ کیس سے متعلق (ن) لیگی قیادت کی بدنیتی ثابت ہوگئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ بتائے دس سال میں ڈرامے بازی کے علاوہ پنجاب میں کیا کیا؟ پانامہ کیس پر تمام اپوزیشن جماعتیں اکٹھی ہیں تمام لیگی اپنی اصل جماعت کی طرف واپس آجائیں۔ جمہوریت کوئی پارٹی نہیں جسے نواز شریف نے رجسٹرڈ کرایا ہو۔ نواز شریف کے جانے سے جمہوریت زیادہ بہتر طریقے سے چلے گی۔ اگر نظام کو کچھ ہوا تو ذمہ دار نواز شریف اور اس کے چند ساتھی ہوں گے۔ نواز شریف جاتے ہیں تو جمہوریت بھی بچ جائے گی اور نظام بھی۔

پرویز الٰہی نے کہا کہ حکومت نے غریب عوام کی بھلائی کے لئے کوئی کام نہیں کیا۔ (ق) لیگ سے (ن) لیگ میں جانے والے واپس آجائیں ہمارے دراوزے کھلے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی تاجر جندال نے نواز شریف سے مشورہ کرکے عالمی عدالت میں کیس کیا عالمی عدالت میں کیس کے دوران نواز شریف سوئے رہے کلبھوشن کے معاملے پر نواز شریف کچھ نہیں بولے۔ انہوں نے کہا کہ جہاں ضروری سمجھا سیٹ ایڈجسٹمنٹ کریں گے خواہ کوئی بھی پارٹی ہو۔ فضل الرحمن کے ساتھ ہمارا اچھا تعلق ہے۔