بریکنگ نیوز
Home / صحت / بچوں کی ہڈیاں مضبوط اور توانا بنانے میں فٹ بال اہم ہے، تحقیق

بچوں کی ہڈیاں مضبوط اور توانا بنانے میں فٹ بال اہم ہے، تحقیق

 لندن: اگر بچوں کی ہڈیاں درست انداز میں نشوونما نہ پائیں تو اس کے اثرات پوری زندگی پر مرتب ہوتے ہیں۔ اس کمی سے ہڈیوں کے فریکچر اور گٹھیا کے خطرات خصوصاً عمر رسیدگی میں زیادہ بڑھ جاتے ہی

برطانیہ میں یونیورسٹی آف ایکسیٹر کے ماہرین نے نوٹ کیا ہے کہ بلوغت کی جانب جانے والے بچے اگر فٹ بال کھیلنے کو معمول بنائیں تو اس سے ہڈیوں کی نشوونما بڑھتی ہے اور ہڈیاں زیادہ مضبوط ہوتی ہیں۔

یونیورسٹی آف ایکسیٹر کے ڈاکٹر لوئی گریشیا مارکو نے اپنی ایک پریس ریلیز میں کہا ہے کہ لڑکے جب بلوغت کی جانب قدم رکھ رہے ہوتے ہیں تو عین اسی وقت ان کی ہڈیاں فروغ پارہی ہوتی ہیں۔ یعنی بلوغت کے بعد اگلے پانچ سال ہڈیوں کی زبردست افزائش ہوتی ہے اور فٹ بال کا کھیل اس عمل کو بڑھا دیتا ہے۔

یہ تحقیق ’’جرنل آف بون اینڈ منرل ریسرچ‘‘ میں شائع ہوئی ہے۔ اس میں نوعمر بچوں کے گروپ کو ایک سال تک فٹ بال، پیراکی، اور سائیکل چلانے کو کہا گیا۔ دوسرے گروہ کے بچوں نے کسی کھیل میں کوئی حصہ نہیں لیا تھا۔ ایک سال بعد جب تمام بچوں کی ہڈیوں کا جائزہ لیا گیا تو فٹ بال کھیلنے والوں کی ہڈیوں کی نشوونما تیراکی اور سائیکل چلانے والوں سے  قدرے بہتر تھی۔ ان میں سے جن لڑکوں نے کسی کھیل میں کوئی حصہ نہیں لیا تھا ان کی ہڈیوں کی بڑھوتری اور مضبوطی سب سے کم تھی۔ اس تحقیق میں 12 سے 14 برس کے 116 بچوں کو شامل کیا گیا تھا۔ تاہم فٹ بال کھیلنے والے بچوں میں بون منرل کونٹینٹ (بی ایم سی) دیگر کے مقابلے میں 7 فیصد زیادہ تھا۔

دلچسپ بات یہ ہے فٹ بال کھیلنے سے پنچے کے علاوہ گردن، ریڑھ کی ہڈی اور ٹانگوں کی ہڈیوں پر بھی بہت مفید اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

اس تحقیق کی بنیاد پر ماہرین مشورہ دے رہے ہیں کہ نوعمر بچوں کو ہفتے میں تین سے چار گھنٹے تک فٹ بال ضرور کھیلنی چاہیے کیونکہ یہ ہڈیوں کی نشوونما کا بہترین وقت ہے اور کھیل ان کے لیے بہت مفید ثابت ہوسکتا ہے۔ تاہم ماہرین نے کہا ہے کہ ٹینس، بیڈمنٹن اور ہینڈبال کھیلنے سے بھی اس طرح کےفوائد حاصل کیے جاسکتے ہیں۔