بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / سعودی عرب میں مختصر ترین لباس پہننے والی لڑکی گرفتار

سعودی عرب میں مختصر ترین لباس پہننے والی لڑکی گرفتار

ریاض۔سعودی پولیس نے مختصر ترین لباس پہن کر چہل قدمی کرتے ہوئے ویڈیو بنانے والی لڑکی کو گرفتار کر لیا ۔ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد سعودی شہریوں کی جانب سے لڑکی کی حرکت پر شدید تنقید کی جارہی تھی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق دارالحکومت ریاض میں واقع یوشیکر قصبے کے قلعے میں مختصر لباس پہن کر چہل قدمی کرنے والی خلود نامی لڑکی کو سعودی پولیس نے گرفتار کر لیا ۔

جس پر ملک میں رائج اسلامی لباس پہننے کے حوالے سے قوانین کی خلاف ورزی جیسی دفعات لگا کر مقدمہ قائم کیا گیا ہے۔لڑکی ایک ماڈل ہے، جس نے ویب سائٹ سنیپ چیٹ پر اپنی ویڈیو شیئر کی تو تیزی سے وائرل ہو گئی جس میں وہ یوشیکر قصبے کے قلعے میں مختصر لباس پہن کر چہل قدمی کرتی نظر آتی ہے۔ ویڈیو میں اسے شارٹ سکرٹ اور نیکر پہنے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

اس قسم کی حرکت کرنے پر لڑکی کو سعودی پولیس نے گرفتار کرکے مقدمہ پبلک پراسیکیوٹر کو منتقل کر دیا ۔ویڈیو میں دکھائی دینے والا مقام دارالحکومت کے نواحی قصبے یوشیکر کا ایک قلعہ ہے جس کے اندر ماڈل قابل اعتراض لباس پہن کر چہل قدمی کرتی دکھائی دیتی ہے۔ یہ قلعہ نجد کے صحرامیں واقع ہے اور اس کے اردگرد کئی قدامت پسند قبیلے آباد ہیں۔