بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / کارکردگی کی نشاندہی کیلئے حکمت عملی پیپر متعارف

کارکردگی کی نشاندہی کیلئے حکمت عملی پیپر متعارف


پشاور ۔ حکومت خیبر پختونخوا ایک تین سالہ پبلک فنانشل مالیاتی انتظام کاری اصلاحاتی حکمت عملی(2017-20)کو واضح کرے گی جس میں پالیسی کے مطابق بجٹ سازی اور اس پر موثر عمل درآمدشامل ہے۔ اس سلسلے میں جمعرات کے روز ایک خصوصی اجلاس طلب کیا گیا ہے تاکہ سرکاری طور پر پی ایف ایم حکمت عملی پیپر کا اجراء کیا جائے۔صوبائی محکموں کے سربراہان ،ماہرین تعلیم،محققین،ترقیاتی شراکت داروں کے نمائندے،سول سوسائٹی اور میڈیا کے نمائندے بھی اس ایک روزہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔صوبائی وزیر خزانہ خیبر پختونخوا مظفر سید اس اجلاس کی صدارت کریں گے جبکہ صوبائی کابینہ نے عمل درآمد کے لئے پی ایف ایم حکمت عملی پیپر کی پہلے ہی منظوری دیدی ہے جو ایک پیشگی تقاضا ہے۔

پی ایف ایم حکمت عملی پیپر کا مقصد طے شدہ اہداف کا حصول ہے جن میں پالیسی کے مطابق منصوبہ سازی اور بجٹ سازی،ایک جامع،قابل اعتماد اور شفاف بجٹ اور بجٹ کے اجراء میں کنٹرول ،وسائل کو فعال بنانا،اثاثے ،واجبات اور نتائج کے لئے احتساب شامل ہیں۔یہ تمام مقاصد تین سال کی مدت میں کئی ایک سرگرمیوں کے ذریعے حاصل کئے جائیں گے۔یہ پیپر کارکردگی کی نشاندہی کے ساتھ اصلاحات کے لئے ایک روڈ میپ اور رہنمائی کا درجہ رکھتے ہیں۔ اس طرح سے اصلاحات کے اثرات اور نتائج کی پیمائش کی جائے گی اور حکمت عملی پیپر میں مقرر شدہ اہداف کے ذریعے ان کی نگرانی کی جائے گی۔ اصلاحات کا مرکز توجہ پالیسی کی بنیاد پر منصوبہ سازی اور بجٹ سازی،بجٹ کے اجراء اور اخراجات میں زیادہ کنٹرول،وسائل زیادہ پیدا کرنے اور ٹیکسیشن میں اصلاحات ہوں گی۔

اصلاحات کا ایک اہم ستون بجٹ کی معلومات شہریوں کے لئے آسان بنانے،اثرات اور نتائج کے لئے مالیاتی وسائل کے انتظامات کے لئے مخصوص یونٹس کا قیام ہوگا۔محکمہ خزانہ خیبر پختونخوا نے دیگر محکموں سے مذاکرات اور مشاورت کے ذریعے ڈی ایف آئی ڈی کی تکنیکی معاونت کے ساتھ ذیلی نیشنل گورننس پروگرام(SNG)کے ساتھ یہ حکمت عملی تیار کی ہے۔اس حکمت عملی کا مرکز توجہ سرکاری مالیاتی ڈھانچے اور طریقہ کار کے مقاصد کا استحکام ہے تاکہ 2020تک کیلئے خیبر پختونخوا حکومت نے ایک نظام وضع کرے جس کے ذریعے وسائل کی مساویانہ تقسیم اور بجٹ کے موثر اور بروقت اجراء اور خدمات کی بہتر طور پر فراہمی کو یقینی بنایاجاسکے۔