بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / ظفر حجازی 4 روزہ ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے

ظفر حجازی 4 روزہ ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے

اسلام آباد: سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن پاکستان (ایس ای سی پی) کے گرفتار چیئرمین ظفر حجازی کو اسلام آباد کی مقامی عدالت نے چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کے حوالے کردیا۔

ایف آئی کی جانب نے مقامی عدالت سے ایس ای سی پی کے چیئرمین ظفر حجازی کا دس روزہ ریمانڈ حاصل کرنے کی استدعا کی تھی۔

کیس کی سماعت سینئر سول جج محمد شبیر نے کی، سماعت کے دوران ظفر حجازی کے وکیل عاضد نفیس نے اپنے موکل کو دس روزہ ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کرنے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ دو ماہ تک انکوائری ہو چکی اب مزید ریمانڈ کی کیوں ضرورت پڑ رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس وقت ان کے موکل کے جسمانی ریمانڈ کی ضرورت نہیں جبکہ کل سے ظفر حجازی کی شوگر ہائی ہے اور انہیں گردوں کا بھی مسئلہ ہے۔

ظفر حجازی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ان کے موکل کو ایمبولینس کے ذریعے پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (پمز) ہسپتال سے عدالت لایا گیا جس کی گواہی پمز کی ایک ڈاکٹر نے عدالت میں دی۔

ایس ای سی پی کے گرفتار چیئرمین کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ان کے موکل کو ناکردہ گناہوں کی سزا مل رہی ہے۔

سینئر سول جج محمد شبیر نے پمز ہسپتال سے ظفر حجازی کی میڈیکل رپورٹ طلب کرتے ہوئے کہا کہ میڈیکل رپورٹ پڑھنے کے بعد ہی ریمانڈ کا فیصلہ کیا جائے گا۔

تاہم محمد بشیر نے ظفر حجازی کی میڈیکل رپورٹ پڑھنے کے بعد انہیں صحت یاب قرار دے کر چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کر دیا۔

جس کے بعد ایف آئی اے ظفر حجازی کو لے کر روانہ ہوگئی، انہیں ایمولینس میں لے جایا گیا۔