بریکنگ نیوز
Home / صحت / ہائی بلڈپریشر میں مفید غذائیں

ہائی بلڈپریشر میں مفید غذائیں

جب ہم بے احتیاطی کرتے ہیں تو خوراک ہماری دشمن بن جاتی ہے ۔ ہم بے احتیاطی میں وہ سب غذائیں لیتے ہیں جو مضر صحت ہوتی ہیں مثلاً ہمیں سب سے پہلے نمک کی مقدار کم سے کم کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے لیکن عموماً ہائی بلڈ پریشر کے مریضوں کو نمکین غذاؤں اور کچا نمک کھانے سے رغبت ہوا کرتی ہے ۔ اگر ہائی بلڈ پریشر روکنا ہے تو نمک کو تقریباً خوراک سے نکالنا ہوگا یا اثر زائل کرنا ہوگا ۔ ذیل میں نمک کا توڑ کرنے والی غذاؤں کے بارے بتایا گیا ہے ۔

کیلا:سوڈیم یا نمک کی زیادتی بلڈ پریشر بڑھادیتی ہے تو اس کا اولین توڑ پوٹاشیم سے کیجیے جو کیلے میں وافر مقدار میں موجود ہوتا ہے ۔ ایک تحقیق کے مطابق دن بھر میں صرف دو کیلوں کا استعمال دس فیصد تک بلڈ پریشر کنٹرول کردیتا ہے ۔
ٹماٹر:ٹماٹر میں Lycopeneموجود ہے اور یہ جزو بلڈ پریشر کی شرح کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے ۔ روزانہ کی خوراک میں کچی سلاد شامل کرکے خراب کولیسٹرول کی شرح بہت حد تک کم کی جاسکتی ہے ۔ بھاپ میں ٹماٹر گلا لیجیے ۔ گردوں کے مسائل نہ ہوں تو بیجوں سمیت ورنہ بیج کے بغیر کھائیں ، آرام محسوس کریں گے

انڈے کی سفیدی:اپنے دن کا آغاز اچھے ناشتے سے کرنا ضروری ہے اور اسے طرز زندگی میں شامل کرنا اور بھی اہمیت رکھتا ہے ۔ دن کے آغاز میں ہمارے جسم کو پروٹین کی ضرورت ہوتی ہے ۔ کم از کم ایک انڈے کی سفیدی تو کھائی جاسکتی ہے ۔

تربوز:
موسم گرما میں بلاناغہ ہرروز تھوڑا سا تربوز خالی پیٹ کھانا مفید ہے ۔ یہ دوران خون کو کنٹرول رکھتا ہے ۔
کشمش:کشمش کی تھوڑی مقدار ہائی بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں مفید ہے ۔
سبز چائے: سیاہ چائے اور کافی کی مقدار کو کم سے کم کرکے سبز چائے کو معمول بنانا چاہیے۔ چھ ہفتوں تک تین کپ سبزچائے کا روزانہ
استعمال سات پوائنٹس تک کمی لاسکتا ہے ۔

سمندری یا ہمالیائی نمک:
عام نمک میں وہ معدنیات سوڈیم اور کلورائیڈ موجود ہیں جبکہ دوسرے(سمندری یا ہمالیائی) میں ستر سے زائد
معدنیات موجود ہیں جو ہمارے اعصابی نظام اور دل کی کارکردگی کے لیے ضروری ہیں ۔ آخر الذکر میں سوڈیم کی مقدار بے حد معمولی ہوتی ہے ۔ زیادہ سوڈیم سے ہمارے جسم میں پانی جمع رہتا ہے جس کے نتیجے میں خون کی مقدار بڑھ جاتی ہے ۔

مچھلی اور اس کاتیل:
مچھلی اور اس کے تیل کے سپلی منٹ دونوں دل کی بیماریوں اور ہائی بلڈ پریشر کے لیے مفید ہیں ۔
اخروٹ، بادام ، تخم بالنگا اور دلیہ:صنوبری بادام، اخروٹ، دلیے میں ملا کر کھانے سے ہائی بلڈ پریشر کنٹرول ہوتا ہے ۔ تخم بالنگا کو شربت میں استعمال کیا جاتا ہے ۔ یہ پیٹ کی گرمی دور کرنے کے علاوہ دوران خون کو بھی اعتدال میں لاتا ہے ۔ چند دانے صاف پانی میں بھگو کررکھ دیں یہ پھول جائیں گے تو لال شربت ملا کر پی لیں ۔ روزانہ کھلی فضا میں گہری سانسیں لینے سے بلڈ پریشر نارمل ہونے کی جانب مائل ہوتا ہے ۔ اس کے ساتھ بلڈ پریشر کی مانیٹرنگ اور باقاعدہ ورزش ضروری ہے ۔