بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پوری قوم کی نظریں پانامہ کیس پر مرکوز

پوری قوم کی نظریں پانامہ کیس پر مرکوز

اسلام آباد۔پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پوری قوم کو پانامہ کیس فیصلے کا انتظار ہے ‘ سپریم کورٹ سے درخواست ہے کہ وہ پانامہ کیس کا فیصلہ جلد از جلد سنائے ‘ ساری حکومت وزیر اعظم کی کرپشن بچانے میں لگی ہوئی ہے ‘ وکلاء اور سول سوسائٹی سمیت سب وزیر اعظم سے استعفیٰ مانگ رہے ہیں‘ سندھ اسمبلی وزیر اعظم سے استعفیٰ مانگ رہی ہے اور کے پی کے اسمبلی میں بھی وزیر اعظم کے استعفیٰ کیلئے قرار داد بھیجی جا چکی ہے ‘ لاہور میں دہشتگردی کا بڑا اواقعہ دھماکہ ہوا لیکن وزیر اعظم مالدیپ چلے گئے، پاکستان سے چوری کا پیسہ غیر قانونی طریقے سے باہر بھجوایا گیا ‘ سارے سیاستدان برے نہیں ہیں لیکن زیادہ تر ملک لوٹ رہے ہیں‘ایفیڈرین کیس میں پکڑے جانے والے شخص نے مجھ پر کیس کر دیا‘وزیر اعظم کے پرنسپل سیکرٹری کا راولپنڈی میں اربوں کا پلازہ بن رہا ہے‘ کہاں سے اس کے پاس پیسہ آیا‘ قوم کے مجرم سارے اکٹھے ہو گئے ہیں، مافیا کے خلاف کھڑے ہونے والے میڈیا ہاؤسز کو سلام پیش کرتا ہوں۔ بدھ کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ سپریم کورٹ کے ججز سے قوم کی جانب سے درخواست کرتا ہوں کہ پانامہ کیس کا فیصلہ جلدی سنائیں۔ لاہور میں اتنا بڑا واقعہ ہوا اور وزیر اعظم ملک سے باہر چلے گئے۔ سندھ کی پارلیمنٹ نواز شریف سے استعفیٰ مانگ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حالات بگڑ رہے ہیں اور معیشت تباہ ہو رہی ہے۔ وزیر اعظم نے دورہ مالدیپ کی دعوت خود منگوائی۔ لندن فلیٹ بیچ کر پیسہ پاکستان بھجوایا کدھر میرا 60 لاکھ کا فلیٹ اور کدھر حسن نوا ز کا 6 ارب روپے کا گھر۔ میرے چند لاکھ روپے کے فلیٹ کو اربوں روپے کے محل سے ملایا جا رہا ہے۔ دونوں بھائی قوم کو بے وقوف بنا رہے ہیں۔ عمران خان نے کہاکہ کاؤنٹی کھیلنے والے تمام کھلاڑی لندن میں فلیٹ لیتے ہیں۔ اسحاق ڈار کے دوبئی میں ڈیڑھ ‘ ڈیڑھ ارب روپے کے گھر ہیں۔ میں نے 2002ء میں فلیٹ ڈکلیئر کئے تھے ۔ یہ کہتے ہیں بابا آدم کے زمانے سے امیر ہیں ۔ ان کا شکریہ میں نے 40 سال کا ریکارڈ ڈھونڈ لیا۔ عمران خان نے کہا کہ شریف خاندان نے ابھی تک ایک بھی ٹرانزیکشن نہیں دی۔ ان کی دستاویز جعلی ہیں۔ کسی نے سنا ہے کہ ملک کا وزیر اعظم دوسرے ملک میں اقامہ لے کر نوکری کر رہا ہو۔ یہ قوم کے مجرم ہیں۔ یہ گاڈ فادر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے پرنسپل سیکرٹری کا راولپنڈی میں اربوں روپے کا پلازہ بن رہا ہے۔ کہاں سے اس کے پاس پیسہ آیا۔ قوم کے مجرم سارے اکٹھے ہو گئے ہیں۔ عمرا ن خان نے کہا کہ اگر میں نااہل ہو جاتا ہوں تو یہ بہت کم قیمت ہو گی۔ ملک کو ان جیسے مافیا سے چھڑانے کیلئے۔ جسٹس کھوسہ کو سلام پیش کرتا ہوں جنہوں نے انہیں گاڈ فادر کہا۔

ان کی پارٹی میں شاید ہی کوئی آدمی ہو جو ایک نمبر ہو۔ انہوں نے کہا کہ نوا زشریف کی نااہلی پر تاریخی جشن ہو گا۔ نریندر مودی کوئی جگہ نہیں چھوڑتا جہاں وہ یہ نہ کہتا ہو کہ پاکستان دہشت گرد ہے۔ کئی ممالک نے وزیر اعظم کو اجازت دے کر منسوخ کر دی کہ ان پر کریمنل کیس چل رہا ہے۔ میں جانتا ہوں کہ نوا زشریف مافیا کا ججز پر بہت پریشر ہو گا۔ جو مجھے 10 ارب روپے کی آفر کر سکتے ہیں وہ ان کے ساتھ کیا کر رہے ہوں گے۔ سارے سیاستدان برے نہیں ہیں لیکن زیادہ تر ملک لوٹ رہے ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ میرا ‘ جہانگیر ترین کا اور علیم خان کا پانامہ پیپرز میں نام نہیں ہے۔ خواجہ آصف نے کسی اور ملک کا اقامہ لیا ہوا ہے۔ ایفیڈرین کیس میں پکڑے جانے والے شخص نے مجھ پر کیس کر دیا۔ نواز شریف کے پیچھے اربوں روپے کی کرپشن ہے۔ اس لئے نااہلی کا کہتے ہیں۔ نواز شریف 62 اور 63 پر پورا نہیں اترتے۔ پیپلز پارٹی اور خورشید شاہ بہت اچھا کام کر رہے ہیں۔ جو بھی سیدھے راستے پر آتا ہے ہمیں اس کی حمایت کرنی چاہیے۔