بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / اسرائیل کا مسجد اقصی میں جدید آلات لگانے کا فیصلہ

اسرائیل کا مسجد اقصی میں جدید آلات لگانے کا فیصلہ

تل ابیب۔اسرائیلی حکومت نے مسجد اقصی کے داخلی راستوں پر میٹل ڈٹیکٹرز ہٹا کر دیگر جدید آلات لگانے کا فیصلہ کر لیا ،مشرقی بیت المقدس میں اسرائیلی سختیوں کے خلاف فلسطینیوں کا احتجاج جاری ہے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق فلسطینیوں کے شدید احتجاج کے بعد اسرائیل نے مسجد اقصی کے مرکزی دروازے سے میٹل ڈٹیکٹر کے بعد مزید متنازع سیکیورٹی تنصیبات ہٹا دیں۔صیہونی کابینہ کے اجلاس میں سیکیورٹی اداروں کی سفارشات کو منظور کرلیا گیا۔

اجلاس کے بعد وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے رات گئے اعلان کیا کہ میٹل ڈٹیکٹرز ہٹاکر جدید ٹیکنالوجی کے دیگر آلات کو استعمال کیا جائے گا۔ اسرائیل کے نئے سیکیورٹی انتظامات کی مخالفت میں فلسطینیوں نے نمازیں مسجد کے باہر گلیوں میں ادا کیں اور اسرائیل کے خلاف احتجاج کیا۔مظاہروں کے دوران صیہونی فوج سے جھڑپوں میں متعدد فلسطینی زخمی ہوگئے۔ اس سے پہلے فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس نے کہا کہ مشرقی یروشلم کے حساس مذہبی مقام پر میٹل ڈیٹیکٹر ہٹائے جانے کے باوجود وہ اسرائیل کے ساتھ رابطے منجمند رکھیں گے۔

دوسری جانب معاملے پر غور کے لئے عرب لیگ کے وزرائے خارجہ کا ہنگامی اجلاس آج مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں ہوگا۔ اجلاس میں مقبوضہ بیت المقدس میں اسرائیلی سیکیورٹی اقدامات اور مظالم کے خلاف لائحہ عمل تیار کیا جائیگا۔