بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / غربت میں کمی کیلئے دستکاری کے شعبہ کی سرپرستی کی ضرورت ہے، صدر پاکستان اکانومی واچ

غربت میں کمی کیلئے دستکاری کے شعبہ کی سرپرستی کی ضرورت ہے، صدر پاکستان اکانومی واچ

اسلام آباد ۔ پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ دستکاری کے شعبہ کی سرپرستی کی ضرورت ہے ، جس سے غربت میں کمی آئے گی جبکہ شعبہ سے وابستہ لاکھوں خواتین با اختیار بھی ہوں گی۔ دیہات میں بسنے والی لاکھوں خواتین کو گھر بیٹھے با عزت روزگار فراہم کر نے کیلئے اس سے بہتر اور کوئی طریقہ نہیں ہے اور شعبہ کی برآمدات کے فروغ سے بھاری زرمبادلہ بھی کمایا جا سکتا ہے۔ ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے اتوار کو اپنے ایک بیان میں کہا کہ دستکاری کے شعبہ کی ترقی سے نہ صرف ملک بھاری زرمبادلہ کما ئے گا بلکہ دیہات سے شہروں کی جانب نقل مکانی کے رجحان میں بھی کمی آئے گی اور بے روزگاری بھی کم ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ خواتین کے با اختیار ہونے کے اثرات محدود نہیں بلکہ لا محدود ہوتے ہیں جس سے کئی نسلیں مستفید ہوتی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ایک زمانہ میں دستکاری کا شعبہ تیزی سے ترقی کر رہا تھا مگر مداخل کی بڑھتی ہوئی قیمت، قرضوں کی عدم فراہمی، آڑھیتیوں اور ہول سیلرز کی لوٹ مار اور عدم پالیسی کے باعث شعبہ کی کارکردگی متاثر ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 80 فیصد دستکاریاں سندھ میں تیار کی جاتی ہیں مگر ان میں کمی واقع ہو رہی ہے ۔

نجی شعبہ اس میں سرمایہ کاری کرے جبکہ حکومت چین کے اشتراک سے نہ صرف بھاری زرمبادلہ کماسکتی ہے بلکہ عالمی منڈی پر اجارہ داری بھی قائم کی جا سکتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت اس شعبہ پر توجہ دے، اسے قرضوں اور مارکیٹنگ کی سہولیات فراہم کرے، مڈل مین کا کردار ختم کرے جبکہ ان دستکاریوں کے لئے ملک بھر میں ڈسپلے سینٹر بھی بنائے جائیں تاکہ شعبہ کی ترقی بھی یقینی بنائی جا سکے ۔