بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عائشہ گلالئی نے تحریک انصاف کو خیر باد کہہ دیا

عائشہ گلالئی نے تحریک انصاف کو خیر باد کہہ دیا


اسلام آباد۔پاکستان تحریک انصاف کے اہم رہنما مستعفی کن قومی اسمبلی عائشہ گلالئی نے پارٹی کو چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈنڈے کھانے اور قربانیاں دینے والوں کو پارٹی میں کوئی اہمیت نہیں دی جاتی‘ پارٹی اور قومی اسمبلی کی نشست چھوڑ رہی ہوں۔منگل کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے عائشہ گلالئی نے کہا کہ افسوس کے ساتھ بتا رہی ہوں کہ پاکستان تحریک اصاف کو چھوڑ رہی ہوں جلد پریس کانفرنس کرکے تفصیلات سے آگاہ کروں گی۔

اگر وزیراعظم پر 62,63 لاگو ہوسکتا ہے تو اخلاقی طور پر کرپٹ انسان پر بھی لاگو ہونا چاہئے۔ پی ٹی آئی میں خواتین کی عزت نہیں کی جاتی اور ورکرز کو چھوٹے ورکر کہا جاتا ہے۔ پارٹی ورکرز نے کافی ایشوز پر پہلے بھی احتجاج کیا ہے لیکن پی ٹی آئی میں ماحول نہیں ہے کہ ورکرز کے ایشوز کو سنا جائے۔ جس طرح دنیا کو دکھایا جاتا ہے خوشنما کرکے پی ٹی آئی ویسی نہیں ہے۔ پی ٹی آئی کے وہ لوگ جو ڈنڈے کھاتے ہیں‘ قربانیاں دیتے ہیں ان کو کوئی اہمیت نہیں دی جاتی۔

پارٹی ایم این ایز بھی پارٹی پالیسیز کے خلاف ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ لوگ عزت لینے کے لئے سیاسی جماعتوں کا حصہ بنتے ہیں جبکہ میں عزت کیلئے پارٹی چھوڑ رہی ہوں۔عمران خان کو سوچنا چاہئے یہ انگلینڈ نہیں پاکستان ہے۔ پارٹی اور قومی اسمبلی کی نشست چھوڑ رہی ہوں میں نے سیاست صرف عوام کیلئے کی ہے پی ٹی آئی کے کارکن اور ایم این ایز میرے ساتھ ہیں مستقبل کے بارے میں ابھی کچھ نہیں بتا سکتی۔

دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری نے کہا ہے کہ عائشہ گلالئی کو جو گلہ شکوہ ہے اس کی تفصیلات نہیں معلوم‘ پتہ چلے گا تو کچھ فیصلہ کرینگے‘ ان کو چاہئے پہلے قومی اسمبلی کی نشست سے استعفیٰ دیں۔منگل کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ جیسا ماحول پی ٹی آئی میں ہے ویسا کسی اور سیاسی جماعت میں نہیں ہے۔ عائشہ گلالئی کو جو گلہ شکوہ ہے اس کی تفصیلات نہیں معلوم۔

پی ٹی آئی کے جلسوں میں ہزاروں خواتین ہوتی ہیں ۔ راتوں رات ان کو کیا گلہ ہوگیا یہ تو ان سے پوچھنا پڑے گا۔ ناز بلوچ اور عائشہ گلالئی خواتین کی مخصوص نشستوں پر قومی اسمبلی میں آئی تھیں فواد چوہدری نے کہا کہ اگر عائشہ پی ٹی آئی چھوڑنا چاہتی ہیں ان کو چاہئے پہلے قومی اسمبلی کی نشست سے استعفیٰ دیں۔ یہ کہنا کہ پارٹی میں احترام نہیں کیا جاتا بہت جنرل بیان ہے پتہ تو چلے کہ کیا ہوا ہے کیا نہیں ہوا اس کے بعد ہی کچھ فیصلہ کرینگے۔