بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عائشہ گلالئی کے ذاتی معاون کی لب کشائی

عائشہ گلالئی کے ذاتی معاون کی لب کشائی

اسلام آباد۔رکن قومی اسمبلی عائشہ گلالئی کے ذاتی معاون نور زمان نے ان کی کرپشن کا پول کھول کر رکھ دیا ، ترقیاتی منصوبوں سمیت مختلف معاہدوں میں کل ملا کر ایک کروڑ ہضم کرگئی اور خود وزیر داخلہ بننے سمیت والد شمس قیوم کو گورنر بنانے کے خواب بھی دیکھتی رہی جبکہ امیر مقام سے بھی مسلسل رابطے میں رہی ۔ عائشہ گلالئی کے ذاتی معاون نور زمان نے کہا کہ عائشہ گلالئی نے تمام مالی لین دین اپنے والد شمس قیوم کے حوالے کردیا تھا اور ہر منصوبے میں لاکھوں روپے بٹورے گئے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ ان کے پاس عائشہ اور ان کے والد کے دستخط شدہ دستاویزات ثبوت کے طور پر موجود ہیں جن کے تحت عائشہ گلالئی نے بنوں لنک روڈ ترقیاتی منصوبے میں 72 لاکھ وصول کئے جن میں 47 لاکھ میں نے ان کے لئے وصول کئے تھے کرک سولر ٹیوب ویل منصوبے کے پیسوں سے چھ لاکھ لکی مروت ترقیاتی منصوبے پیسوں سے بارہ لاکھ اور کونسلر ٹکٹ بیچنے کے عوض دس لاکھ وصول کئے اور یہ سارا پیسہ جنڈہ ڈومیل میں ساڑھے چار کنال کے گھر کی تعمیر پرلگایا گیا جو اثاثوں میں ظاہر تک نہیں کیا گیا۔

انہوں نے ایک صحافی کے سوال کے جواب میں کہا کہ عائشہ گلالئی کے والد شمس قیوم نے منصوبہ بنایا تھا کہ عمران خان سے این اے ون کا ٹکٹ مانگ کر عائشہ کو وزیر داخلہ اور خود گورنر خیبر پختوخوا بنوں گا عائشہ گلالئی کے والد امیر مقام کے ساتھ مسلسل رابطے میں رہے اور کئی بار عائشہ گلالئی اور ان کے والد گورنر ہاؤس بھی گئے