بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / شریف خاندان کیخلاف ایک اور درخواست دائر

شریف خاندان کیخلاف ایک اور درخواست دائر

اسلام آباد ۔ سپریم کورٹ آف پاکستان کی جانب سے نااہل قرار دئیے جانے والے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کے خاندان کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے لئے اسلام آبادہائی کورٹ میں ایک اور درخواست دائر کر دی گئی۔ درخواست پاکستان عوامی تحریک اسلام کے صدر نے اپنے وکیل ابرار حسین شاہ ایڈووکیٹ کے ذریعے دائر کی ہے۔درخواست میں وزارت داخلہ، ڈی جی ایف آئی اے، ڈائریکٹر امیریگیشن پاسپورٹ، نواز شریف، مریم نواز، حسن نواز، حسین نواز، کیپٹن صفدر اور اسحاق ڈار کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ نواز شریف اور اس کے خاندان کے خلاف سپریم کورٹ نے نیب ریفرنس دائر کرنے کا حکم دے رکھا ہے، سپریم کورٹ حکم کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف اور دیگر نے منی ٹریل نہیں دی ہے اور ان افراد کے خلاف ریفرینس دائر ہونے ہیں، نواز شریف، کیپٹن صفدر، مریم نواز ، اسحاق ڈار اور حسن نواز، حسین نواز اگر پاکستان سے باہر چلے گئے تو پھر واپس نہیں آئیں گے، پاکستانی قوانین کے تحت نواز شریف، کیپٹن صفدر بیٹی مریم نواز ، اسحاق ڈار اور حسن نواز، حسین نواز کے خلاف کارروائی کی جائے۔

نواز شریف منی ٹریل نہ دینے سے مجرم ثابت ہونتے ہیں اور وہ باہر منتقل کیے گئے پیسے واپس پاکستان نہیں لا رہے ہیں، درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ شریف خاندان کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے تاکہ ٹرائل کے دوران انہیں ملک سے چلے جانے سے روکا جا سکے۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کے رجسٹرار آفس نے درخواست وصولی کر لی ہے اور آئندہ اس پر سماعت کے لیے تاریخ مقرر کی جائے گی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی رائس عبدالواحد ایڈووکیٹ کی جانب سے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کے خاندان کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے لئے اسلام آبادہائی کورٹ میں ایک درخواست دائر کی جا چکی ہے۔