بریکنگ نیوز
Home / دلچسپ و عجیب / ملائیشین خاتون نے محبت کے لیے باپ کی کروڑوں ڈالر کی جائیداد ٹھکرادی

ملائیشین خاتون نے محبت کے لیے باپ کی کروڑوں ڈالر کی جائیداد ٹھکرادی

کوالالمپور: ملائیشین ارب پتی بزنس مین کی بیٹی نے اپنی محبت پانے کے لیے باپ کی کروڑوں ڈالر کی جائیداد ٹھکرادی۔

محبت ایسا نشہ ہے جو ایک بار چڑھ جائے تو پھر اس کا اترنا مشکل ہی ہے اور ایسا صرف فلموں کی کہانیوں میں ہی ہوتا ہے جہاں لڑکی محبت کی خاطر باپ کی جائیداد کو ٹھکرادیتی ہے، حقیقی زندگی میں ایسے واقعات کم ہی ہوتے ہیں لیکن ملائیشین خاتون نے محبت کی خاطر باپ کی کروڑوں کی جائیداد کو ٹھکراکر فلمی کہانیوں کو حقیقت کا روپ دے دیا۔

ملائیشیا کے بزنس مین تان سری خو کی بیٹی انجلینا فرانسس نے محبت کی خاطر والد کی کروڑوں ڈالر کی جائیداد کو ٹھکرادیا اور شادی کرلی، 2008 میں 34سالہ انجلینا فرانسس کی آکسفورڈ یونی ورسٹی میں کریبئین کے رہائشی سائنسدان جدیدہ فرانسس سے ملاقات ہوئی جس کے بعد خاتون کو فرانسس سے محبت ہوگئی، انجلینا نے جب اپنے والد تان سری کو اس بارے میں بتایا تو انہوں نے ایک معمولی آدمی سے شادی کرنے سے انکار کردیا تاہم اپنی مرضی سے شادی کی صورت میں انجلینا کو باپ کی جائیداد سے ہاتھ دھونا پڑتا۔والد کی جانب سے سختی سے انکار کے بعد  انجلینا فرانسس نے اپنی محبت کو پانے کا فیصلہ کیا اور باپ کی کروڑوں کی جائیداد کو چھوڑ کر فرانسس سے شادی کرلی۔

ایک انٹرویو میں انجلینا کا کہنا تھا کہ ان کے والد کا فیصلہ غلط تھا تاہم میں بہت خوش قسمت ہوں، اگر آپ کے پاس پیسہ ہو تو زندگی بہت آسان ہو جاتی ہے لیکن پیسے کے بہت سے نقصانات بھی ہیں تاہم والد کی دولت چھوڑنے سے پہلے میں نے یہ سب نہیں سوچا اور یہ میرے لیے بہت آسان کام تھا۔

انجلینا فرانسس کے والد کا شمار امیر لوگوں میں ہوتا ہے جن کے پاس ایک اندازے کے مطابق 30 کروڑ ڈالر سے زائد کے اثاثے ہیں جب کہ انجلینا کی والدہ سابقہ مس ملائیشیا بھی رہ چکی ہیں۔