بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / اغواء شدہ کمسن بچی کو گداگر بنائے جانیکا انکشاف

اغواء شدہ کمسن بچی کو گداگر بنائے جانیکا انکشاف

پشاور۔پشاور کے نواحی علاقے بڈھ بیر شاہ زمین گڑھی سے 3 سال قبل لاپتہ ہونیوالی 6 سالہ بچی کو بنوں میں گداگر بنائے جانیکا کا انکشاف ہوا ہے پولیس نے اغواء کار کو گرفتار کرکے اس کے قبضے سے بچی کو بازیاب کراکر والدین کے حوالے کردیاپولیس نے مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی ہے۔

اس ضمن میں گزشتہ روز ڈی ایس پی صدر سرکل یاسین خا ن نے ایس ایچ او بڈھ بیر شہریارخان کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایاکہ عبدالواحد ولد محمد ایوب سکنہ شاہ زمین گڑھی بڈھ بیر نے 2014 ء میں رپورٹ درج کرائی تھی کہ اس کی 6 سالہ بھتیجی اقراء پراسرار طور پر لاپتہ ہوئی ہے جس کا مقدمہ درج کرکے تفتیش کی گئی لیکن کوئی سراغ نہ مل سکا بعدازاں ایس ایس پی آپریشنز سجاد خان نے واقعہ کا سخت نوٹس لیا اور بچی کو فوری طور پر بازیاب کرانے کاحکم دیا جس کی روشنی میں قائم خصوصی ٹیم نے تفتیش شروع کی تو مدعی نے ایک ہفتہ قبل بتایاکہ بچی تھانہ صدر ضلع ڈیرہ اسماعیل خان پولیس نے برآمد کرلیا جس پر پولیس حرکت میں آگئی اور ڈیرہ پولیس سے رابطہ کرکے بچی کو والدین کے حوالے کردیا جبکہ ملزم کامل سکنہ بنوں کو گرفتار کرلیاجس نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ وہ پیشہ ور گداکر ہے ۔

تین سال قبل وہ پشاور آیا تھا جہاں گوہر ہوٹل آیا تھا جہاں وہ مسجد میں رات گزارنے کے بعد موقع ملتے ہی بچی کو اغواء کرکے بنوں لے گیا اور اس دورن وہ اس سے بھیک اور چندہ اکھٹا کرواتا تھاپولیس نے مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کردی ہے ۔دوسری جانب بازیاب ہونیوالی 6 سالہ بچی اقرا بی بی کاکہناتھاکہ تین سال تک وہ اپنے والدین اور بھائیوں کو بہت یاد کرتی تھی لیکن ظالم ملزم اسے تشدد کرکے اس سے زبردستی بھیک منگواتا تھا پریس کانفرنس سے دوران بچی کو جب والدین کے حوالے کیاگیاتو رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے بچی نے با ت چیت کرتے ہوئے بتایاکہ وہ گھر کے باہر کھیل رہی تھی کہ اچانک ملزم آیا اور اپنے ساتھ لے گیا تین سال تک گھر والوں کے پیچھے بہت خفا تھی ۔