بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / مقروض آدمی کا قربانی کرنا

مقروض آدمی کا قربانی کرنا

س:میں بہت مقروض ہوں لیکن میرا شوق ہے کہ عید کے دن قربانی بھی کروں تاکہ قربانی کے ثواب سے محروم نہ ہو جاؤں کیا مقروض آدمی کا قربانی کرنا شرعاً درست ہے؟

ج:مقروض کو قرض ادا کرنے کی فکر کرنی چاہیے قربانی نہ کرے‘ قرض خواہوں یا اہل حقوق کے حقوق ضائع کرکے قربانی کرنا جائز نہیں لیکن اگر کسی کا حق ضائع کئے بغیر قربانی کرے اور مقصود اللہ کی رضا ہو‘نہ کہ فخر و دکھلاوا تو کوئی حرج نہیں‘ ثواب بھی ملے گا‘یاد رہے اگر قرض کو تمام مال سے نکالنے کے بعد بھی مال نصاب کے برابر بچ جائے تو پھر ایسے مقروض پر قربانی واجب ہے۔