بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبر پختونخوا کے تمام سکولوں میں آئی ٹی لیب بنانیکی ہدایت

خیبر پختونخوا کے تمام سکولوں میں آئی ٹی لیب بنانیکی ہدایت

پشاور ۔ خیبر پختونخواکے وزیر ابتدائی و ثانوی تعلیم محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ رواں سال کے اختتام تک صوبے کے ان500 ہائی سکولوں جہاں سائنس لیبارٹریز نہیں میں ترجیحی بنیادوں پر یہ لیبارٹریاں قائم کی جائیں گی جبکہ تقریباً 3ہزار ہائیرسیکنڈری و ہائی سکولوں میں سے 1379سکولوں میں آئی ٹی لیب قائم کئے گئے ہیں اور باقی ماندہ تقریباً 1600سکولوں میں آئی ٹی لیب بنانے کے لئے متعلقہ حکام کو کیس تیار کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ان خیالات کا اظہارنہوں نے پشاور میں ضلع مردان کے سکولوں سے متعلق جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں دوسروں کے علاوہ سیکرٹری تعلیم ڈاکٹر شہزاد بنگش، ا سپیشل سیکرٹری قیصر عالم، ڈپٹی کمشنر مردان عمران حامد شیخ اوردیگر متعلقہ حکام نے بھی شرکت کی۔

اجلاس میں مردان میں شعبہ تعلیم میں جاری مختلف منصوبوں اور پروگراموں پر پیش رفت کا تفصیلی جائزہ لیا گیااوراس سلسلے میں کئی اہم فیصلے کئے گئے۔اجلاس کویقین دہانی کرائی گئی کہ ماضی کی طرح تمام منصوبے کامیابی سے مکمل کر لئے جائیں گے ۔صوبائی وزیر نے کہا کہ پی ٹی آئی کے دور حکومت میں شعبہ تعلیم میں متعارف کردہ اصلاحات سے سرکاری سکولوں پر عوام کا اعتماد بڑھ رہاہے اور حال ہی میں نجی تعلیمی اداروں کے ڈیڑھ لاکھ سے زیادہ بچوں کے سرکاری سکولوں میں داخلے اس کا بین ثبوت ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ صوبے میں روایتی تعلیم سے ہٹ کرعصرحاضرکے تقاضوں سے ہم آہنگ ایسا نظام تعلیم چاہتے ہیں جس سے بچوں کی تخلیقی صلاحیتیں اجاگر ہوں اور عملی زندگی میں کامیابی سے آگے بڑھیں۔عاطف خان نے کہا بلاشبہ محکمے نے گزشتہ سالوں کے دوران 100فیصد اہداف حاصل کرکے نئی مثال قائم کی ہے اور انہیں امید ہے کہ محکمہ اپنی یہی بہتر کارکردگی آئندہ بھی برقرار رکھے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومتی تعلیمی پالیسی کا ہدف صوبے کے ہر بچے کو زیورتعلیم سے آراستہ کرنااور سکولوں سے باہر لاکھوں بچوں کو سکول لاناہے کیونکہ صوبے کی تقدیر تعلیم کے ذریعے ہی تبدیل کی جا سکتی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ تعلیم عام کرنے کے لئے شروع کردہ تمام منصوبوں کی ہر صورت بروقت تکمیل یقینی بنائی جائے گی۔عاطف خان نے محکمے کے حکام کو سختی سے ہدایت کی کہ تعلیمی اہداف کا حصول ہر صورت ممکن بنایا جائے اورشعبہ تعلیم کی بہتری کے لئے حکومت کی طرف سے جاری کردہ ہدایات اور احکامات پر من وعن عملدرآمدکی جائے انہوں نے واضح کیا کہ اس سلسلے میں کوئی کوتاہی یا تساہل برداشت نہیں کی جائے گی ۔