بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / ڈینگی سے جاں بحق افراد کی تعداد 13ہو گئی

ڈینگی سے جاں بحق افراد کی تعداد 13ہو گئی

پشاور۔صوبائی دارالحکومت میں ڈینگی نے ایک اورخاتون کی جان لے لی جس کے بعد پشاور میں ڈینگی سے جاں بحق افراد کی مجموعی تعداد 13ہوگئی پشاور کے علاقے سفید ڈھیری کی رہائشی 45سالہ دل نیاز بی بی میں ڈینگی وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد انہیں ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں رکھا گیا تاہم گزشتہ روز وہ جانبر نہ ہو سکی خیبر پختونخوا حکومت کے ڈینگی رسپانس یونٹ نے خاتون کی ڈینگی سے ہلاکت اور اب تک کل 13اموات کی تصدیق کی ہے۔

مذکورہ ہلاکتوں میں تہکال میں سب سے زیادہ 9افراد ڈینگی سے موت کی وادی میں اتر چکے ہیں جبکہ ایبٹ آباد کے بھی دو افراد ڈینگی سے ہلاک ہوئے واضح رہے کہ حکومت کی جانب سے تہکال کو ریڈ زون قرار دینے اور تمام تر حفاظتی اقدامات کے باوجود ڈینگی کو کنٹرول نہیں کیا جا سکا۔دوسری جانب پشاور سمیت صوبے کے متاثرہ اضلاع میں 24گھنٹوں کے دوران مزید 121مریضوں میں ڈینگی وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے جس کے بعد ڈینگی سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 4052تک پہنچ گئی ہے۔

ڈینگی رسپانس یونٹ کے مطابق خیبر ٹیچنگ ہسپتال جہاں پر مریضوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے نے گزشتہ روز مریضوں کا ڈیٹا فراہم نہیں کیا فراہم کردہ اعداد و شمار کے مطابق 24گھنٹوں کے دوران 931افراد کے خون کی سکریننگ کی گئی جن میں 121میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہسپتال میں 55نئے مریض داخل کئے گئے ہیں جبکہ مجموعی طور پر 775مریض مختلف ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں ۔

محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے خیبر ٹیچنگ ہسپتال کی جانب سے ڈینگی رسپانس یونٹ کے ساتھ عدم تعاون کا نوٹس لیتے ہوئے معاملہ وزیراعلیٰ کے ساتھ اٹھانے کا فیصلہ کر لیا ہے ذرائع کے مطابق محکمہ صحت نے خیبر ٹیچنگ ہسپتال میں 6اہلکار تعینات کئے ہیں جن کی ذمہ داری ڈینگی کے مریضوں کے اعداد و شمار اکٹھے کرکے رسپانس یونٹ کو فراہم کرنا ہے تاہم ہسپتال کے عدم تعاون کے باعث مریضوں کے کوائف کے بغیر متاثرہ علاقوں کی نشاندہی میں مشکلات درپیش ہیں ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پہلے ہی تمام متعلقہ اداروں کو ایک دوسرے کے ساتھ لیزان کی ہدایت کر چکا ہے ۔

محکمہ صحت کی ہدایت پر خیبر ٹیچنگ ہسپتال میں سپیشل ڈینگی کلینک ٗکمپیوٹراور سکرینگ کاؤنٹر قائم کر دیا گیا ہے کلینک میں 24گھنٹے دو ڈاکٹرز موجود ہونگے جبکہ کمپیوٹر کاؤنٹر15کمپیوٹر آپریٹرز تین شفٹوں میں نیٹ ورک ایڈمنسٹریٹر کی سربراہی میں فرائض انجام دے رہے ہیں ہسپتال ترجمان فرہاد خان کے مطابق پانچ لیبارٹری کے کاونٹر بھی بنائے گئے ہیں جن میں 3ہیموٹالوجی مشینوں کے لئے ، تین سنٹر ئیفیوگ مشینوں کے لئے اور ڈینگی سرالوجی اسٹیشن بھی ہیں جہاں 22ٹیکنیشن ، 14انٹرنی اور 4سپروائیزر سٹاف مختلف شفٹو ں میں ڈائریکٹر پیتھالوجی ڈاکٹر محمد اصغر کی سربراہی میں فرائض انجام دے رہے ہیں۔