بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / اپر دیر میں جدید طرز کی جیل تعمیر کرنے کا فیصلہ

اپر دیر میں جدید طرز کی جیل تعمیر کرنے کا فیصلہ

پشاور ۔ خیبرپختونخوا کے سینئر وزیر بلدیات ودیہی ترقی عنایت اللہ نے کہا ہے کہ ضلع اپر دیر میں 77کنال غیر متنازعہ اراضی پر محیط جدید طرز کا نیاء جیل تعمیر کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے میں جرائم کی روک تھام اورامن وامان کی بہتری کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھارہی ہے ۔اس امر کا فیصلہ جمعرات کے روز سول سیکرٹریٹ پشاورمیں سینئر وزیر بلدیات عنایت اللہ کی سربراہی میں ضلع اپر دیر میں نئی جیل کی تعمیر سے متعلق ایک اعلیٰ سطح اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

اجلاس میں سیکرٹری محکمہ داخلہ ،سپیشل سیکرٹری محکمہ داخلہ ،پلاننگ آفیسر ،ڈسٹرکٹ ناظم اپر دیر ودیگر متعلقہ افسران اورعمائدین علاقہ اپر دیر نے شرکت کی۔ اس موقع پر سیکرٹری ہوم نے شرکاء اجلاس کو ضلع اپر دیر میں 98 کنال اراضی پر مشتمل جیل کے قیام کے 2007 سے زیر التواء منصوبے اوراس کی اراضی سے متعلق تفصیلی بریفننگ دیتے ہوئے نقشے کے ذریعے نئی جیل کے قیام کے امور اورلوگوں کے خدشات وتحفظات سے آگاہ کیا۔

اجلاس میں اس ضمن میں ضلع ناظم کی سربراہی میں اجلاس منعقد کرنے اوردیگر مالکان اراضی سے مشاورت کا فیصلہ بھی کیا ۔سینئر وزیربلدیات نے کہا کہ مخلوط حکومت پسماندہ علاقوں کی ترقی اورعوام کو بنیادی سہولیات فراہمی کے لئے بھرپور کوششیں کررہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ داروڑا کالج اور انجینئرنگیونیورسٹی کے علاوہ پی کے 91 میں اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبے مکمل کیے گئے ہیں اوراللہ کے فضل کرم سے اپر دیر میں عوام سے کیے گئے باقی وعدے بھی پورے کیے جائیں گے۔

انہوں نے متعلقہ افسران اورمقامی حکومت کو ہدایت کی کہ مفاد عامہ کے منصوبوں کومدنظر رکتھے ہوئے بروقت عملی اقدامات اٹھائیں۔