بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / بھارت کی سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی

بھارت کی سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی


سیالکوٹ ۔ بھارت کی طرف سے سندھ طاس معاہدہ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دریائے چناب کا پانی روکے جانے کی وجہ سے ہیڈمرالہ کے مقام پر پانی کی آمد 18153 کیوسک رہ گئی جبکہ ہیڈمرالہ سے دریائے چناب سے نکلنے والی نہر مرالہ راوی لنک پانی کی کمی کی وجہ سے بدستور بند ہے۔

محکمہ ایری گیشن کے مطابق دریائے چناب میں شامل ہونے والے مقبوضہ کشمیر سے آنے والے دو دریاؤں دریائے جموں توی میں 2773 کیوسک پانی اور دریائے مناور توی میں صرف 934 کیوسک پانی ہے جس کی وجہ سے ہیڈمرالہ کے مقام پر دریائے چناب کا مجموعی پانی 21808 کیوسک ہے تاہم دریائے چناب کا اپنا پانی 18153 کیوسک ہے حالانکہ سندھ طاس معاہدہ کے تحت بھارت روزانہ دریائے چناب میں 55 ہزار کیوسک پانی چھوڑنے کا پابند ہے۔

لیکن بھارت نے دریائے چناب کا پانی مقبوضہ کشمیر میں تعمیر شدہ بگلیہار ڈیم پر روک رکھا ہے، پانی کی کمی کی وجہ سے ہیڈمرالہ کے مقام پر دریائے چناب سے نکلنے والی نہرمرالہ راوی لنک بدستور بند ہے جس کی وجہ سے سیالکوٹ سمیت پنجاب کے مختلف اضلاع کی لاکھوں ایکٹر زرعی اراضی کو پانی میسر نہیں اور کسان و کاشتکار ٹیوب ویلوں اور پیٹر انجن چلاکر فصلوں کو سیراب کر رہے ہیں۔