بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / ناظمین کاترقیاتی فنڈز کٹوتی کیخلاف احتجاج کااعلان

ناظمین کاترقیاتی فنڈز کٹوتی کیخلاف احتجاج کااعلان

پشاور ۔پشاورکے چاروں ٹاؤنز کے ویلج اور نیبر ہوڈ کے ناظمین نے ترقیاتی فنڈزمیں کٹوتی اوربیوروکریسی کیے ناروا رویے کیخلاف احتجاجی تحریک کا آغاز کر دیا۔ ناظمین نے بیوروکریسی کو بلدیاتی نظام کی کامیابی میں سب سے بڑی رکاوٹ قراردیا۔پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے آل ناظمین ارگنائزنگ کمیٹی ضلع پشاور کے اراکین ناظمین امان اللہ خان‘ عالمزیب خان‘ملک عابد‘ ناظم دلبا رباچااوردیگر نے کہاکہ خیبر پختونخوا میں بلدیاتی نظام عوام کے مسائل حل کرنے کیلئے لایاگیا تھا لیکن ناظمین کو تاحال بااختیار نہیں بنایاگیا اوربیوروکریسی نہیں چاہتی کہ نچلی سطح تک اختیارات کی منتقلی ہو ، بیوروکریسی کا رویہ منتخب عوامی نمائندوں کیساتھ مناسب نہیں اورخصوصاًڈی جی محکمہ بلدیات نہیں چاہتے کہ یہ نظام کامیاب ہو۔

انہوں نے کہاکہ ڈھائی سو تک ویلج اور نیبرہڈناظمین کے موبائل، انٹرٹینمنٹ اورکونسلروں کی سیشن چارجز کی 4 کروڑ85 لاکھ سے زائد رقم نہ ملنے کی تحقیقات کی جائیں ،لوکل گورنمنٹ دفتر سے غیر قانونی حکمنامے بند کئے جائیں، تمام ویلج اور نیبرہڈکونسلوں کو کلاس فور فراہم کرکے نادرا سافٹ ویئر جلد فراہم کیا جائے، ناظمین اور نائب ناظمین کے اعزازیہ میں سو فیصد اضافہ کرکے کیپرا رولز کے مطابق ناظمین کو ترقیاتی کاموں سے روکنے کے عمل پر نوٹس لیا جائے اورڈبلیو ایس ایس پی جہاں خدمات فراہم نہیں کرتی ان ویلج کونسلوں میں فنڈ سے کٹوتی غیر قانونی ہے اسلئے اس کو دوبارہ ان ویلج کونسلوں کو فراہم کیاجائے ۔

2017-18 کے ترقیاتی فنڈز جلد فراہم کئے جائیں تاکہ منصوبے بروقت مکمل ہو سکے۔انہوں نے کہاکہ اے ڈی دفتر سے ڈینگی کی روک تھام کیلئے فراہم کردہ ادویات غیر معیاری تھے اس کی بھی تحقیقات کی جائے ۔ناظمین نے اعلان کیا کہ سات روز کے اندراگرہمارے مطالبات پورے نہ ہوئے تو محکمہ بلدیات اور دیگرمتعلقہ محکموں کو تاے لگادینگے۔