بریکنگ نیوز
Home / دلچسپ و عجیب / برطانوی خاتون کو سوشل میڈیا پر تصاویر پوسٹ کرنے پر ڈیڑھ سال قید

برطانوی خاتون کو سوشل میڈیا پر تصاویر پوسٹ کرنے پر ڈیڑھ سال قید

لندن: برطانیہ میں معذوری کا ڈھونگ رچا کر حکومت سے ہزاروں پاؤنڈز کی رقم بٹورنے والی خاتون کو ڈیڑھ سال قید کی سزا سنادی گئی۔

لنڈا ہوئی نے معذوری اور بے روزگاری کا بہانہ بناکر حکومت سے 81 ہزار پاؤنڈز کی امداد بٹور لی۔ فوٹو: انٹرنیٹ

برطانیہ میں معذوری کا ڈھونگ رچا کر حکومت سے ہزاروں پاؤنڈز کی رقم بٹورنے والی معمر خاتون سوشل میڈیا پر تصاویر پوسٹ کرکے پھنس گئی اور بھانڈا پھوٹنے پر اسے ڈیڑھ سال قید کی سزا سنادی گئی۔

58 سالہ لنڈا ہوئی نامی خاتون 15 سال سے حکومت کی آنکھوں میں دھول جھونک رہی تھی۔ اس نے معذوری اور بے روزگاری کا بہانہ بناکر ناصرف حکومت سے 65 ہزار 244 پاؤنڈز کی امداد وصول کی بلکہ 15 ہزار 690 پاؤنڈز کا ٹیکس بھی معاف کرالیا۔

اس طرح اس نے کل 80 ہزار 934 پاؤنڈز (ایک کروڑ 14 لاکھ روپے سے زائد) کی امداد وصول کی۔ انگلینڈ کی کاؤنٹی اسٹیفورڈ کے علاقے ٹام ورتھ سے تعلق رکھنے والی لنڈا ہوئی کا بھانڈا اس وقت پھوٹا جب اس نے سوشل میڈیا پر زیرآب تیراکی اور موٹرسائیکل چلاتے ہوئے اپنی تصاویر پوسٹ کیں۔ معذوری کا ڈرامہ سامنے آنے کے بعد مزید تحقیقات کی گئیں تو یہ انکشاف بھی ہوا کہ خاتون 1997 سے برسرروزگار بھی ہے۔

اسٹیفورڈ کاؤنٹی کے جج مائیکل ایلسم نے لنڈا ہوئی کو ناقابل اعتبار انسان قرار دیا جس نے شرمناک فعل کا ارتکاب کیا۔ لنڈا ہوئی نے حکومت سے امداد وصول کرنے کےلیے دعویٰ کیا تھا کہ وہ چل پھر نہیں سکتی اور اس کی کمر میں اتنی شدید تکلیف ہے کہ اسے سیڑھیوں سے الٹے ہوکر اترنا پڑتا ہے۔