بریکنگ نیوز
Home / دلچسپ و عجیب / اطالوی خاتون کی پرتعیش تقریب میں خود سے شادی

اطالوی خاتون کی پرتعیش تقریب میں خود سے شادی

روم۔ایک اطالوی خاتون نے ایک پرتعیش تقریب میں اپنے آپ سے خود ہی شادی کر لی ۔ تقریب میں روایتی سفید جوڑا، تین منزلہ کیک، برائڈ میڈز اور ستر مہمان شامل تھے۔برطانوی ٹی وی کے مطابق چالیس سالہ فٹنس ٹرینر لائرہ میسی نے کہا کہ میرا ماننا ہے کہ ہم سب کو پہلے خود سے پیار کرنا ہوگا۔ آپ سپنوں کے راجے کے بغیر بھی فری ٹیل مکمل کر سکتے ہیں ،ایک مقامی اخبار سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ میں نے اپنے عزیز و اقارب سے کہا تھا کہ اگر 40 سال کی عمر تک مجھے کوئی نہ ملا تو میں خود سے ہی شادی کر لوں گی۔

اگر کسی دن مجھے کوئی مرد ملتا ہے جس کے ساتھ میں اپنا مستقبل پلان کر سکتی ہوں تو بہت اچھی بات ہے مگر میری خوشی اس پر منحصر نہیں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ وہ پہلی اطالوی خاتون ہیں جس نے خود سے شادی کی ہے۔ مئی میں ایک اطالوی مرد نولو ریگوئیرہ نے ناپولی میں خود سے شادی کی تھی۔تاہم واضح رہے کہ اس شادی کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔مگر یہ اس بڑھتے ہویے رجحان کی علامت ہے کہ بہت سے لوگ اب خود سے شادی کرنے لگے ہیں۔

اس عمل کو ’سولو گیمی‘ کہا جا رہا ہے۔اس طرح کی تقاریب کے حمایتی کہتے ہیں کہ خود سے پیار کرنے اور خود کو پسند کرنے کا معاملہ ہے۔ اس کے علاوہ یہ اس سماجی عزت حاصل کرنے کی کوشش ہے جو عموماً شادی شدہ جوڑوں کے لیے مختص ہوتی ہے۔2014 میں ایک جاپانی ٹریول ایجنسی نے غیر شادی شدہ خواتین کے لیے عروسی تقریبات کا پیکج آفر کرنا شروع کیا تھا۔ یاد رہے کہ خود سے شادی کرنے کی اطلاعات 1993 سے سامنے آ رہی ہیں۔ اس موضوع کو کئی کتابوں اور ٹی وی شوز میں چھوا گیا ہے۔