بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / اے ٹی ایم کے ذریعے محصولات کی ادائیگیوں کی سہولت

اے ٹی ایم کے ذریعے محصولات کی ادائیگیوں کی سہولت

کراچی: پاکستانی شہری بہت جلد آن لائن بینکنگ اور اے ٹی ایمز کے ذریعے وفاقی محصولات کی ادائیگی کرسکیں گے۔

گذشتہ روز جاری ہونے والے اعلامیے کے مطابق اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی)، فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور ون لنک نے ایک طریقہ کار بنانے کے معاہدے پر دستخط کیے ہیں جس کا اطلاق رواں سال کے آخر میں ہوجائے گا۔

مجوزہ طریقہ کار کے مطابق بینک ایف بی آر ان لینڈ ریونیو سروس اور ایف بی آر کسٹم کی ادائیگیوں کو ون لنک کے ساتھ منسلک کرنے کے لیے طریقہ کار بنایا جائے گا۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا کہنا تھا کہ ’مذکورہ نظام آپریشنل کرنے کے بعد، محصولات ادا کرنے والے اور درآمد کنندہ ادائیگی رسید (پی ایس آئی ڈیز) حاصل کرنے کے لیے اپنے محصولات اور کسٹم ڈیوٹی کی تفصیلات ایف بی آر-آئی آر ایس اور کسٹم آن لائن موڈیول کے ذریعے جمع کراسکتے ہیں‘۔

پی ایس آئی ڈی کا استعمال بینکس کی ویب سائٹس یا اے ٹی ایم کے ذریعے محصولات یا ڈیوٹی کی ادائیگی کی تفصیلات تک رسائی کے لیے استعمال کی جائیں گی۔

اس کے ذریعے ٹیکس کنندہ یا ان کے ایجنٹ محصولات کی ادائیگی اپنے بینک اکاونٹ کے ذریعے ایس بی پی بینکنگ سروسز کارپوریشن کے حکومتی اکاونٹ میں منتقل کرسکیں گے، یہ تمام طریقہ کار آن لائن اور خود ساختہ ہوگا۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا کہنا تھا کہ یہ سہولت پورا ہفتہ ان رات میسر ہو گی۔

اس حوالے سے ہونے والی تقریب میں وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے اسٹیٹ بینک آف پاکستان اور ایف بی آر کو مذکورہ منصوبے کی ابتدا پر مبارک باد پیش کی۔

ایس بی پی کے گورنر طارق باجوہ نے کہا کہ یہ اقدام ایس بی پی ویژن 2020 کا ایک حصہ ہے، جس سے ادائیگیوں کے نظام کا طریقہ کار بنانے میں مدد ملے گی۔

ایف بی آر چیئرمین طارق محمود پاشا کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ ایف بی آر، اسٹیٹ بینک اور نجی شعبے کے تعاون اور مشترکہ کوششوں کا حصہ ہے۔

بیان میں مزید بتایا گیا کہ پنجاب بھر میں جائیداد کے ٹیکس جمع کرنے کے لیے نیشنل بینک آف پاکستان (این بی پی) نے پنجاب ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈپارٹمنٹ کے ساتھ مل کر طریقہ کار تیار کرلیا ہے۔