بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / سانحہ لاس ویگاس،امریکہ بھر میں سوگ کا سماں

سانحہ لاس ویگاس،امریکہ بھر میں سوگ کا سماں

لاس ویگاس ۔ لاس ویگاس سانحے کے سوگ میں وائٹ ہاؤس میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی جبکہ شہر شہر مرنے والوں کی یاد میں شمعیں روشن کی گئیں، ایمپائر اسٹیٹ بلڈنگ اور پیرس کے ایفل ٹاور کی روشنیاں بھی بجھادی گئیں،دوسری جانب میوزک کنسرٹ پر فائرنگ کرنے والے شخص کے پاس مختلف اقسام کے 48 جدید اور خودکار ہتھیاروں کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے،ادھر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے (آج ) لاس ویگاس کا دورہ کرنے کااعلان کیا ہے ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سانحہ لاس ویگاس کے سوگ میں وائٹ ہاؤس اور امریکی سینیٹ میں خاموشی اختیار کی گئی۔وائٹ ہاؤس کی ترجمان سارا سینڈرا کا کہنا ہے کہ ابھی گن کنٹرول پالیسی پر بات کرنے کاوقت نہیں۔ فی الحال زخمیوں پر توجہ دے رہے ہیں اور متاثرین کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ امریکا کے کئی شہروں میں متاثرین کے لئے شمعیں روشن کی گئیں۔ ایمپائر اسٹیٹ بلڈنگ اور پیرس کے ایفل ٹاور کی روشنیاں بھی سوگ میں بجھادی گئیں۔

اس موقع پر ہالی وڈ شخصیات نے بھی مذمتی پیغامات جاری کیے ہیں۔دوسری جانب لاس ویگاس میں گزشتہ روز میوزک کنسرٹ پر فائرنگ کرنے والے شخص کے پاس مختلف اقسام کے 48 جدید اور خودکار ہتھیاروں کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے۔ امریکی میڈیا کے مطابق لاس ویگاس کی پولیس اور خفیہ ایجنسیاں امریکی تاریخ کی بدترین خونریزی کے واقعہ کی مختلف پہلوں سے تحقیقات کررہے ہیں تاہم ان کا کہنا ہے کہ وہ اب تک اس بات کا پتہ نہیں لگا سکے کہ ملزم کے اصل مقاصد کیا تھے۔

پولیس نے ابتدائی تفتیش کے بعد بتایا ہے کہ 64 سالہ اسٹیفن پیڈک کے پاس پائلٹ اور شکار کرنے کے لائسنس تھا لیکن اس کے خلاف کوئی مجرمانہ ریکارڈ نہیں ملا۔ ملزم ایک مالدار سابق اکاونٹنٹ تھا لیکن ماضی میں اس کا باپ بینک ڈکیتی کا مرتکب پایا گیا تھا۔پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم مینڈلے بے ہوٹل کی 32 ویں منزل پرمقیم تھا جہاں سے اس نے احاطے میں موجود ہزاروں لوگوں پر فائرنگ کی واقعے کے بعد پولیس نے جب کمرہ کا دروازہ توڑا تو ملزم مردہ حالت میں پایا گیا جس پر پولیس کا کہنا ہے کہ شہریوں پر فائرنگ کے بعد ملزم نے خود کو گولی مار کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا۔

پولیس افسر ٹوڈ فیصلو نے میڈیا نمائندوں کو بتایا کہ جب کمرے کی تلاشی لی گئی تو وہاں سے 23 ہتھیار برآمد ہوئے جب کہ ملزم کے گھرپر چھاپہ مار کارروائی کے دوران 19 ہتھیار قبضے میں لیے گئے۔پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ اسٹیفن پیڈک اپنی 62 سالہ خاتون دوست ماریل ڈینیللے کے ساتھ رہتا تھا لیکن جب پولیس نے ان کی دوست کے بارے میں معلوم کیا تو انہیں پتہ چلا کہ وہ امریکا سے باہر ہیں۔واضح رہے کہ لاس ویگاس میں میوزک کنسرٹ میں فائرنگ سے کم ازکم 59 افراد ہلاک اور 500 سے زائد زخمی ہوئے تھے جن میں بعض کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔