بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / چیئرمین نیب کیلئے جسٹس(ر) جاوید اقبال کے نام پر اتفاق

چیئرمین نیب کیلئے جسٹس(ر) جاوید اقبال کے نام پر اتفاق

سکھر۔چیئرمین نیب کیلئے اپوزیشن وحکومت کی جانب سے جسٹس (ر)جاوید اقبال کے نام پر اتفاق کرلیا گیا ہے جس کا حتمی اعلان وفاقی حکومت کرے گی ۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ حکومت اور اپوزیشن کے درمیان نئے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کے نام پر اتفاق طے پاگیا ہے۔ اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ اور وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے درمیان ہونیوالی ملاقات میں جسٹس (ر)جاوید اقبال کے نام پر غورو خوض کیا گیا تھا اور عندیہ دیا گیا کہ جسٹس جاوید اقبال جوکہ ایک اچھی شہرت اور ماضی کے حوالے سے نام رکھتے ہیں جو کہ ایبٹ آباد کمیشن کے سربراہ بھی رہے ہیں ، چیئرمین نیب کیلئے ان کا نام بہت موزوں ہے ۔ اتوار کے رز سکھر میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ تمام سیاسی جماعتوں سے مشاورت کے بعد اپوریشن کی جانب سے جسٹس (ر) جاوید اقبال کا نام دیا گیا۔

جسے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے قبول کرلیا ہے اس طرح حکومت اور اپوزیشن کے باہمی مشاورت کے بعد جسٹس (ر) جاوید اقبال کا نام فائنل کیا گیا خورشید شاہ نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کا عہدہ آنے ووالے وقت کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے ایسا ایمانددار آدمی چاہئے جو سیاست سے دور اور کرپشن کے خلاف کارروائی کریں کیونکہ ملک میں کرپشن کا بازار سرگرم ہے کرپشن کے خاتمے کے لئے ایم کیو ایم اور جماعت اسلامی سمیت تمام سیاسی جماعتوں نے جسٹس جاوید اقبال کے نام پر اتفاق کیا ہے انہوں نے کہا کہ امید ہے جاوید اقبال ملک وقوم کے لیے سیاست سے بالا تر ہوکر اچھے اقدامات کریں گے کیونکہ ان کا ماضی کافی شاندار رہا ہے۔

واضح رہے جسٹس (ر) جاوید اقبال 2011 میں ایبٹ آباد کمیشن کے سربراہ اور لاپتہ افراد کمیشن کے سربراہ بھی رہے جسٹس جاوید اقبال 31مئی 2011 کو سپریم کورٹ سے ریٹار ہوئے 9مارچ 2007 کو سپریم کورٹ کا خائمقام چیف جسٹس بنایا گیا 20فروری 2000 کو چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ بنے اور 2004 سے 2011 تک سپریم کورٹ کے سینئر جج رہے جسٹس (ر) جاوید اقبال نے 2007 میں پی سی او کے تحت حلف اٹھانے سے بھی انکار کرچکے ہیں