بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خواتین بے حرمتی کے خلاف آج مقبوضہ کشمیر میں مکمل شٹرڈان ہڑتال کا اعلان

خواتین بے حرمتی کے خلاف آج مقبوضہ کشمیر میں مکمل شٹرڈان ہڑتال کا اعلان

سرینگر۔حریت قیادت نے خواتین کی چوٹی کاٹنے کے واقعات کے خلاف آج (پیر کو) وادی بھر میں مکمل شٹرڈان ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔ حریت رہنما سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور یاسین ملک نے خواتین کو ہراساں کئے جانے اور چوٹی کاٹنے کے واقعات کے خلاف وادی بھر میں مکمل شٹر ڈان ہڑتال کی کال دی ہے۔حریت قیادت نے عوام سے اپیل کی کہ خواتین کے ساتھ پیش آنے والے شرمناک واقعات کے خلاف مکمل ہڑتال کرکے پرامن احتجاج ریکارڈ کرایا جائے۔

حریت قیادت نے بیان میں کہا کہ ان شرپسندوں کو پیغام دیا جائے کہ اس طرح کی شرمناک حرکتوں سے کشمیری مزاحمت کو نہیں دبایا جاسکتا بلکہ ہماری حق خودارادیت کی جدوجہد مزید تیز ہوجائے گی۔ گزشتہ 2 ہفتوں کے دوران وادی میں خواتین کی چوٹیاں کاٹنے کے 40 واقعات سامنے آئے اور تمام کارروائیاں دن دیہاڑے کی گئیں۔دوسری جانب بھارتی میڈیا نے بھی وادی میں سکیورٹی کی صورتحال پر سوالا ت اٹھا دیئے ہیں جبکہ بے بس انتظامیہ نے واقعات میں ملوث افراد کے خلاف معلومات دینے پر 6 لاکھ روپے انعام کی رقم کا اعلان کیا ہے۔

کٹھ پتلی حکومت نے خواتین کی چوٹیاں کاٹنے کے خلاف احتجاج کی کال دینے پر 6اکتوبر کو حریت قیادت کو نظربند کردیا تھا تاہم حریت رہنماؤں نے ایک مرتبہ پھر احتجاج اور شٹرڈان ہڑتال کی کال دی ہے۔ علاوہ ازیں بھارتی پولیس نے آل پارٹیز حریت کانفرنس کے رہنما غلام احمد گلزار کو گھر سے گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا جبکہ جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یسین ملک سمیت 8 پارٹی کارکنوں اور رہنماؤں کو عدالتی ریمانڈ پر سری نگر میں سنٹرل جیل منتقل کردیا گیا۔

دریں اثنا بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی تحریک کو کچلنے کے لیے نیا ہتھیار متعارف کراتے ہوئے 21 ہزار پلاسٹک کی گولیاں وادی میں موجود فورسز کے حوالے کردی ہیں۔ قابض انتظامیہ احتجاج کرنے والے مظاہرین کے خلاف اصل گولیوں اور پیلٹ گنز کے ساتھ ساتھ اب پلاسٹک کی گولیاں بھی استعمال کرے گی۔ نئی پلاسٹک کی گولیوں کو بھارتی دفاعی ادارے نے تیار کیا ہے جنہیں اے کے رائفلز کے ذریعے کشمیریوں پر فائر کیا جائے گا۔