بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / عمران خان نے نوجوانوں کو کامیابی کا گر سکھا دیا

عمران خان نے نوجوانوں کو کامیابی کا گر سکھا دیا

ڈیرہ اسماعیل خان۔ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا کہ نواز شریف کا تین سو ارب روپیہ ملک سے باہر ہے اور کہتا ہے کہ مجھے کیوں نکالا، آصف زرداری سینما کے ٹکٹ بلیک کرتا تھا، اورآج ایک لاکھ ایکڑ زمین کا مالک ہے، 60کی دہائی کے بعد سفارشی لوگ اوپر آئے اور پاکستان نیچے چلاگیا، ملکی ترقی اس لیے رکی کیونکہ امیرا ور غریب کیلئے الگ قانون ہیں،2018 میں پی ٹی آئی تمام صوبوں میں حکومت بنائے گی۔

انسان جب تک ہار خود نہیں مانتا اسے کوئی نہیں ہراسکتا،ہم نے خیبر پختونخواہ میں 40چھانگا مانگا جتنے جنگل اگائے،ہمارے ملک کے سارے بڑے بڑے ڈاکواسمبلیوں میں بیٹھے ہیں، ہماری حکومت آئی تو بڑے بڑے ڈاکوؤں کو جیل میں ڈالوں گا۔ منگل کو عمران خان نے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ایک ارب درخت لگانے کا فیصلہ کیا تھا، گلوبل وارمنگ کی فہرست میں پاکستان ساتویں نمبر پر ہے، چھانگا مانگا میں سیاستدانوں کی خرید وفروخت ہوئی تھی۔

2018 میں پی ٹی آئی تمام صوبوں میں حکومت بنائے گی، ہم نے سارے پاکستان کو ہرا بھر کرنا ہے۔ بلین ٹری سونامی منصوبے پر عالمی اداروں نے ہمیں خراج تحسین پیس کیا ، دنیا میں پاکستان کا نوجوانوں کی آبادی کے لحاظ سے دوسرا نمبر ہے،چند سال سے پاکستان میں گرمی زیادہ پڑ رہی ہے، اور بارشیں کم ہورہی ہیں۔ یہی صورتحال رہی توپاکستان میں گرمی سے بہت اموات ہوں گی۔ درخت اگانے پر خیبر پختونخواہ حکومت کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

40 چھانگا مانگا جتنے جنگل خیبرپختونخواہ میں اگائے گئے ہیں، انہوں نے کہا کہ جنگلات کہ وجہ سے گرمی کم اور ماحول بہتر ہوگا، اپنے نوجوانوں کے مستقبل کیلئے جنگلات اورماحول بہتر بنارہے ہیں،تین سال میں درخت 20،20فٹ تک اونچے ہوگئے ہیںِ،نوجوانوں میں سیاسی شعور دیکھ کر خوشی ہوتی ہے،9سال کاتھا توفیصلہ کیا کہ کرکٹر بنوں گا اور بن کر دکھایا، انسان اس وقت ہارتاہے، جب ہار مان لیتاہے، کامیابی کا راز ہے، برے وقت سے خوفزدہ نہیں ہونا۔

پی آئی اے نے دنیا کی بہترین ائیر لائن کو بنایا ہے، نیا پاکستان بنانے کیلئے ہم نے بلین ٹری سونامی شروع کیا،90فیصد پاکستان میں سیوریج سسٹم ہی نہیں ہے، ہم نے ملک کو ہرااورصاف کرنا ہے، نئے پاکستان کیلئے ہم نے قانون کی بالادستی قائم کرنی ہے،سپریم کورٹ فیصلہ کرتی ہے، اور یہ کہتے ہیں ہمیں کیوں نکالا۔مریم کہتی تھی کہ پاکستان تو چھوڑیں بیرون ملک بھی جائیدادیں نہیں ہیں۔

ملکی ترقی اس لیے رکی کیونکہ امیر اور غریب کیلئے الگ الگ قانون ہے، ایسا قانون بنائیں گے، کہ کوئی نہیں کہہ سکے گا مجھے کیوں نکالا،آصف زرداری سینما کے ٹکٹ بلیک کرتے تھے، آصف زرداری آج ایک لاکھ ایکڑزمیں کے مالک ہیں۔ عزیز بلوچ نے بھی بتایا کہ زرداری کیلئے شوگر ملز پر قبضہ کیا۔قومی اسمبلی میں ایسے لگا جیسے ڈاکوؤں کے درمیان بیٹھا ہوں،وزیراعظم نااہل شخص کو کہتا ہے کہ وہ ابھی بھی میرا وزیراعظم ہے، آپ کا 300 ارب روپیہ باہر رکھا ہواہے،اور کہتے ہیں مجھے کیوں نکالا۔

ہماری حکومت آئی توبڑے بڑے ڈاکوؤں کوجیل میں ڈالوں گا،جمہوریت کا مطلب یہ ہے کہ جولیڈر ہو وہ میرٹ پر آئے۔ اگ رمیرٹ ہوتا تو مریم نوا ز کیسے تیارہوگئی، بلاول اور اعتزاز احسن میں کیا مقابلہ ہے،مسلمان بادشاہت کی طرف چلے گئے اوریورپ میں جمہوریت آگئی ۔ہم نے قانون کو تابع لانا ہے، طاقتور کو ہمارا چیلنج ہے 10کروڑ لوگوں کو غربت سے نکالا ہے،60 کی دہائی کے بعد سفارشی لوگ اوپر آئے اور پاکستان نیچے چلا گیا۔

آج امیر کو امیر غریب کو غریب بنانے کی پالیسی بنائی جارہی ہے، پاکستان میں ڈھائی کروڑ بچے سکولوں میں نہیں جاتے ،تربیلا ڈیم ، منگلا ڈیم پر سب منصوبے 60کی دہائی میں بنے،جو ملک دنیا میں آگے نکلا اس میں میرٹ کا نظام بہتر تھا۔