بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خواتین قیدیوں کی سہولیات کیلئے قرارداد منظور

خواتین قیدیوں کی سہولیات کیلئے قرارداد منظور


پشاور۔خیبر پختونخوا اسمبلی نے جیلوں میں بند خواتین قیدیوں کو سہولیات جبکہ ان کے ساتھ قید بچوں کو تعلیم وتربیت کے مواقع کی فراہمی کامطالبہ کیاہے اس سلسلے میں قرارداد کی متفقہ طور پر منظوری دی گئی جبکہ ایک اورقرارداد میں چترال کے علاقہ ریشن میں دوسال سے بجلی کی بندش پرتشویش کااظہار کرتے ہوئے مقامی آبادی کو فوری طورپر بجلی کی فراہمی کامطالبہ بھی کیا گیا گذشتہ روز صوبائی اسمبلی کااجلاس سپیکر مہرتاج روغانی کی صدارت میں ہوا۔

ا س موقع جے یو آئی کی عظمیٰ خان کی طرف سے قرارداد پیش کی گئی کہ صوبہ کی جیلو ں میں بند خواتین قیدیوں کو مناسب سہولیات دی جائیں ان کے صحت وتعلیم کے مسائل پر توجہ دی جائے ساتھ ہی انکو قانونی چارہ جوئی اور ان کے ساتھ بند بچوں کی تعلیم وتربیت کااہتمام کیاجائے۔

دوسری قرارداد پی پی پی کے سردار حسین نے پیش کی جس میں کہاگیاتھاکہ 2015ء میں ریشن کا بجلی گھرسیلاب میں بہہ جانے کے بعد سے علاقہ کی اکیس ہزار کی آبادی بجلی کی سہولت سے محروم چلی آرہی ہے علاقہ کو واپڈاکی بجلی سے کنکشن فراہم کیے جائیں جبکہ پیڈو بجلی گھر کی تعمیر نو کا کام فوری طور پر شروع کرے ایوان نے دونوں قراردادوں کی متفقہ طور پر منظوری دی