بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خیبرپختونخوا کیوکلاء کو غیرممنوعہ بورکے پرمٹ جاری کرنیکاانکشاف

خیبرپختونخوا کیوکلاء کو غیرممنوعہ بورکے پرمٹ جاری کرنیکاانکشاف


پشاور۔پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اعجازانور پرمشتمل دورکنی بنچ نے خیبر پختونخوا کے وکلاء کواپنی حفاظت کیلئے ممنوعہ اورغیرممنوعہ بور کے اسلحہ لائسنس جاری کرنے کی رٹ درخواست پرصوبائی اور وفاقی حکومتوں سے جواب مانگ لیاہے ۔

عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے درخواست گذار احمداللہ کی رٹ پٹیشن کی سماعت کی اس موقع پر پشاورہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری رحمان اللہ بھی عدالت میں پیش ہوئے عدالت کو بتایاگیاکہ پشاورہائی کورٹ نے ممنوعہ اورغیرممنوعہ بورکے اسلحہ لائسنس جاری کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں لیکن وکلاء کو صرف غیر ممنوعہ بورکے لائسنس جاری کئے جارہے ہیں اورممنوعہ بور کے لائسنس نہیں جاری کئے جارہے ہیں۔

اس موقع پرایڈوکیٹ جنرل عبداللطیف یوسفزئی نے عدالت کو بتایا کہ صوبائی حکومت غیرممنوعہ بورکے لائسنس جاری کرسکتی ہے اور اب تک450لائسنس جاری کئے گئے ہیں تاہم ممنوعہ بورکے لائسنس وزارت داخلہ جاری کرتی ہے ایڈوکیٹ جنرل نے ایک اخباری تراشہ بھی پیش کیاجس میں بتایاگیاکہ وفاقی حکومت ممنوعہ بورکے لائسنس کے اجراء کے رولزمیں نرمی کررہی ہے اوریہ اختیارات بھی صوبوں کے حوالے کیاجارہا ہے ہائی کورٹ کے فاضل بنچ نے نوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیا۔