بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں قوانین کے برعکس ترقیاں چیلنج

لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں قوانین کے برعکس ترقیاں چیلنج


پشاور۔پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس یحییٰ آفریدی اورجسٹس اعجازانور پرمشتمل دورکنی بنچ نے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں مروجہ قوانین کے برعکس ڈاکٹروں کی ترقیاں کرنے پر چیئرمین بورڈآف گورنرزسے جواب مانگ لیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے شمائل احمدبٹ ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائر ڈاکٹرعبدالرحمان وغیرہ کی رٹ پٹیشن کی سماعت کی۔

اس موقع پرعدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذارلیڈی ریڈنگ ہسپتال میں اسسٹنٹ پروفیسر اور پروفیسر تعینات ہیں اوربورڈآف گورنرزکے چیئرمین نوشیروان برکی ایک لیٹرجاری کرتاہے جس میں ترقی کے لئے رولزوضع کئے جاتے ہیں اوراس پرکسی سے بھی رائے نہیں لی جاتی جبکہ پی ایم ڈی سی کے اپنے رولزہیں اوراس کے مطابق تمام امورنمٹائے جائیں گے جبکہ اکیڈمک کونسل بھی یہ کہہ چکی ہے کہ پی ایم ڈی سی رولزاپنائے جائیں گے ۔

لہذا پی ایم ڈی سی کے قوانین کے مطابق ڈاکٹروں کو ترقی دی جائے عدالت عالیہ کے دورکنی بنچ نے چیئرمین بورڈآف گورنرز نوشیروان برکی کونوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیا اور ہدایات جاری کیں کہ پی ایم ڈی سی کے رولزاپنائے جائیں ۔