بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / غیر ملکی سرمایہ کارپاکستان میں معاشی مضبوطی کا انتظار کر رہے ہیں‘ سمیع اللہ طارق

غیر ملکی سرمایہ کارپاکستان میں معاشی مضبوطی کا انتظار کر رہے ہیں‘ سمیع اللہ طارق


کراچی۔پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے قائم مقام منیجنگ ڈائریکٹرہارون عسکری ، ای ایف جی ہرمیس پاکستان لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر اور ماہر معاشیات مزمل اسلم اور عارف حبیب لمیٹڈ کے ڈائریکٹر ریسرچ اینڈ بزنس ڈیولپمنٹ سمیع اللہ طارق نے کہاہے کہ پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے ایمرجنگ مارکیٹ میں شامل ہونے کے بعد 300سے زائد غیر ملکی سرمایہ کاروں نے اس میں اپنے اکاؤنٹ کھولے ہیں تاہم وہ سرمایہ کاری کیلئے ملک میں پائی جانے والی سیاسی و معاشی بے یقینی کی صورتحال کے خاتمے کا انتظار کر رہے ہیں۔

اسٹاک ایکسچینج میں20فیصد کمی واقع ہوئی ہے، یہی صورتحال جاری رہی تو بروکریج ہاؤسز بند ہو جائیں گے، ملک میں کارپوریٹ سیکٹر کا منافع بڑھ رہا ہے، لیکن سیاسی صورتحال کی وجہ سے سرمایہ اور سرمایہ کار بیرون ملک منتقل ہو رہے ہیں۔خصوصی بات چیت میں ہارون عسکری نے کہاکہ دنیا بھر کے سرمایہ کاروں نے پاکستان کی نیشنل کلیئرنگ کمپنی کے ذریعے پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں اپنے اکاؤنٹ کھولے ہیں۔

یہ سب پی ایس ایکس کے ایمرجنگ مارکیٹ میں شامل ہونے کے بعد ہوا ۔ ملک میں پائی جانے والی بے یقینی کی صورتحال کی وجہ سے غیر ملکی سرمایہ کار سرمایہ کاری کیلئے مناسب وقت کا انتظار کر رہے ہیں، کیونکہ اگر وہ اس وقت سرمایہ کاری کرتے ہیں تو انہیں کوئی فائدہ نہیں ہو گا۔ مزمل اسلم نے کہاکہ اسٹاک ایکسچینج میں20فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔

اگر یہی صورتحال جاری رہی تو بروکریج ہاؤسز بند ہوناشروع ہوجائیں گے۔ متعدد بروکریج ہاؤسز غیر ملکی سرمایہ کاری کیلئے بیرون ملک روڈ شوز منعقد کر رہے ہیں اور امید ہے کہ وہ پاکستان کا حصہ حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ سمیع اللہ طارق نے کہاکہ ملک میں کارپوریٹ سیکٹر کا منافع بڑھ رہا ہے، لیکن سیاسی صورتحال کی وجہ سے سرمایہ اور سرمایہ کار بیرون ملک منتقل ہو رہے ہیں۔ انہوں نے مستقبل کی سرمایہ کاری کیلئے اسٹاک مارکیٹ کو بہترین قرار دیا اور کہا کہ گزشتہ 10برس میں اسٹاک مارکیٹ نے اوسط منافع 28فیصد دیا ہے۔