بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / آئندہ انتخابات گزشتہ مردم شماری کی بنیاد پر کرائے جائیں‘خورشید شاہ

آئندہ انتخابات گزشتہ مردم شماری کی بنیاد پر کرائے جائیں‘خورشید شاہ


اسلام آباد۔قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے تجویز دی کہ 2018 میں منعقد کیے جانے والے عام انتخابات گزشتہ مردم شماری کے مطابق کرائے جائیں۔ایک انٹرویو میں خورشید شاہ نے کہاکہ جب تک پیپلز پارٹی کے حال ہی میں ہونے والی مردم شماری کے نتائج اور اعداد و شمار کے حوالے سے خدشات دور نہیں کیے جاتے تب تک وہ مسلم لیگ (ن) کی جانب سے قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی نشستوں کی نئی حلقہ بندیوں کے حوالے سے ایوان میں بحث کیلئے لائے گئے آئینی ترمیمی بل کی کبھی حمایت نہیں کرے گی۔

انتخابات میں تاخیر کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ ان کی جماعت انتخابات میں تاخیر نہیں دیکھنا چاہتی جبکہ یہی وہ بنیاد ہے جس پر انہوں نے انتخابات گزشتہ مردم شماری کی بنیاد پر کرانے کی تجویز دی۔سید خورشید شاہ نے واضح کیا کہ انہوں نے حکمراں جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن) یا پھر کسی بھی سیاسی جماعت کو اب تک ایسی تجویز براہِ راست پیش نہیں کی۔

انہوں نے واضح کیا کہ آئینی ترمیمی بل کی حمایت کا مطلب رواں برس ہونے والی متنازع مردم شماری میں صوبوں کے نتائج کو قبول کرنا ہے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ پیپلز پارٹی کو (ن) لیگ کی جانب سے یہ یقین دہائی کرائی گئی تھی کہ اس بل کی منظوری سے قبل مردم شماری کے نتئاج پر پی پی پی کے خدشات کو دور کیا جائیگاچونکہ وہ اجلاس سے جلد ہی چلے گئی تھے تاہم نوید قمر نے انہیں بتایا کہ حکومت نے اجلاس کے دوران انہیں یقین دہانی کرائی کہ محکمہ شماریات کے حکام جلد ہی پی پی پی اور ایم کیو ایم کے نمائندگان کے ساتھ ملاقات کریں گے جہاں ان کے خدشات دور کیے جائیں گے تاہم حکومت کی جانب سے اب تک ایسی کوئی ملاقات ترتیب نہیں دی گئی۔

جب وزیر قانون سے سید خورشید شاہ کی پیشکش پر ان کی رائے جاننے کے لیے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں کچھ قانونی رکاوٹیں ہیں کیونکہ اس حوالے سے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کہہ چکا ہے کہ ایسا تب تک ممکن نہیں ہو سکتا جب تک یہ بل سپریم کورٹ میں چیلنج نہیں کر دیا جائے۔