بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پی ٹی آئی میں شمولیت کا رجحان ہماری کامیابی کا مظہر ہے ٗ پرویز خٹک

پی ٹی آئی میں شمولیت کا رجحان ہماری کامیابی کا مظہر ہے ٗ پرویز خٹک


پشاور ۔ خیبرپختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے نوشہرہ سے مسلم لیگ (ن) کے سینئر نائب صدر محبوب علی خان اور دیگر رہنماؤں اور عہدیداروں کی تحریک انصاف میں شمولیت کا خیر مقدم کیا ہے اور اسے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی قیادت ، صوبائی حکومت کی چار سالہ خدمات اور عوام دوست پالیسیوں پر عوام کے غیر متذلزل اعتماد کا مظہر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کے آخری سال میں عموماً لوگ بر سراقتدار پارٹی سے علیحدہ ہوتے ہیں مگر اس کے برعکس تحریک انصاف میں شمولیت کا رجحان آئے روز تیز تر ہوتا جارہا ہے۔

تحریک انصاف نے روایتی سیاست و حکومت کی جگہ عوامی حکمرانی کا قابل عمل اسلوب متعارف کرایا۔تبدیلی کیلئے مربوط جدوجہد کی وجہ سے عوام پی ٹی آئی میں شامل ہورہے ہیں۔ پاکستان کو درپیش چیلنجز سے نکالنے کیلئے ملکی سطح پر بھی نظام کی تبدیلی وقت کی اشد ضرورت بن چکی ہے جس کے لئے مخلص قیادت کی ضرورت ہے جو اداروں کو اصلی مینڈیٹ کے مطابق فعال بنا سکے اور غریب عوام کو سیاسی آمروں اور بادشاہوں کی غلامی سے نجات دلا کر خدمات کی فراہمی کا خود کار نظام وضع کر سکے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں اور عہدیداروں کی تحریک انصاف میں شمولیت کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر میاں جمشید الدین کا کا خیل،ضلع ناظم لیاقت خان خٹک ایم این اے ڈاکٹر عمران خٹک، پارلیمانی سیکریٹری برائے محکمہ پی اینڈ ڈی میاں خلیق الرحمن خٹک ، ڈسٹرک نائب ناظم اشفاق احمد ، سینئر نائب صدر سلیم مجاہد ،تحریک انصاف کے نائب صدر نہار خان اور تحصیل ناظم احد خٹک نے بھی خطاب کیااور نئے شامل ہونے والوں کو خوش آمدید کہا ۔

تقریب میں پاکستان مسلم لیگ ن ضلع نوشہرہ کے سینئر نائب صدراور تحصیل پبی کے سابق نائب ناظم محبوب علی خان، ضلعی رہنماؤں ارشاد قریشی اور نبی امین نے دیگر عہدیداروں اور اپنے سینکڑوں ساتھیوں سمیت مسلم لیگ ن سے تیس سالہ رفاقت ختم کرکے تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا ۔تحریک انصاف میں شامل ہونے والے دیگر اہم عہدیداروں میں اختر گل سینئر نائب صدر نوشہرہ، حاجی اسحا ق صدر بالو، بخت روان ڈویژنل یوتھ ونگ پشاور جنرل سیکریٹری،صدر تاروجبہ محمد ظاہر، صدر خوش مقام بہار علی، تحصیل جنرل سیکرٹری اختر اعوان،سینئر نائب صدر تاروملنگ خان، صدر کٹارے آصف خان، صدر یوتھ ونگ محمد فواد، صدر ناصر کلے محمد غنی، جنرل سیکرٹری عمر حیات، جنرل سیکرٹری پی ایم ایل این خویشگی بالا نوید علی، نائب ناظم ویلج کونسل نمبر ون خویشگی بالا نو رالامین، تارو جبہ کے جنرل کونسلر فیاض خان، خوش مقام کے نائب ناظم حاجی نیاز علی خان ، بختئی کے مسلم لیگی رہنما ملک شجاع، حشمت خان ،این اے پانچ کے صدر فضل حق،نثار جنرل سیکریٹری ،سوشل میڈیا کوآرڈینٹر پی ایم ایل این نصرت علی،ارشاد قریشی، محمد عمیر قریشی، شاہ خالد، عبدالصمد، چوہدری ماجد قدیر،حاجی خلیل الرحمن کاکا ،حاجی شمس الرحمن کاکا ، فیروز شاہ، حاجی فضل رازق،عبد المالک، عبدالخالق، سیف الملوک، فضل مالک،انور بیگ ، اخلاص الدین ، حامد علی، حاجی بہرام خان، باسط شاہ، ملک آفتاب خان،باز محمد ، نوشاد خان ، مسکین خان، انور حبیب، احمد علی، عادل، وقاص، سعید الرحمن، حاجی مصنف شاہ، حاجی محمد شاہ، حاجی موسیٰ خان اور حاجی صنم خان،سید المومنین، مہر الامین، بابر سجاد ، رحیم، عاطف، انیس محمد، رئیس محمد، خان آیاز، مدرار اللہ، محمد عمران، اسامہ، عبداللہ اور دیگر شامل ہیں۔

وزیراعلیٰ نے تحریک انصاف میں شامل ہونے والوں کو پارٹی کی ٹوپیاں پہنا کر خوش آمدید کہا ۔وزیر اعلی نے کہاکہ ملک کو کرپٹ عناصر کے چنگل سے آزاد کرانے اور ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کیلئے ایماندار قیادت کو آگے لانا ضروری ہے۔اس کے بغیر ترقی کا تصور بھی ممکن نہیں پرویز خٹک نے واضح کیا کہ عمران خان واحد سیاسی لیڈر ہیں جن کا اپنا دامن صاف ہے اور قوم کو لیڈ کرنے کی بھر پور صلاحیتوں کے مالک ہیں ۔ عمران خان اپنی زندگی میں خوش تھے اُنہیں قدرت نے عزت ، شہرت ، دولت ہر چیز سے نوازا تھا۔وہ سیاست کے میدان میں نظام کی تبدیلی کا خواب لے کر اُترے کیونکہ اُن کا دل غریب کے درد سے معمور ہے۔

وہ پاکستان کو ایک خوشحال اور ترقی یافتہ ملک دیکھنا چاہتے ہیں یہی وجہ ہے کہ مفاد پرست حکمرانوں سے مایوس عوام نے عمران خان کی قیادت پر اعتماد کیا جو قوم کے خوشحال مستقبل کی نوید ہے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ بیرون ملک پاکستانی اپنا سرمایہ پاکستان میں لانے کیلئے تیار ہیں مگر اُنہیں اس ملک کے نظام اور حکمرانوں پر اعتماد نہیں ہے جس ملک کا وزیراعظم نااہل اور صدر زرداری رہا ہو اس پر اعتماد کیوں کر ممکن ہے۔پاکستان پر دُنیا کے اعتما د کو بحال کرنے کیلئے کرپٹ عناصر کا صفایا وقت کی ضرورت ہے ۔لوٹ مار اور پاکستان مزید ایک ساتھ نہیں چل سکتے ۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سلیم مجاہد اور محبوب علی نے کہا کہ گورنر کے پی کے اقبال ظفر جھگڑا کے رویے اور مسلم لیگ ن کی قیادت کے غلط فیصلوں کی وجہ سے مسلم لیگ ن کا نوشہرہ میں صفایا ہوگیا انہو ں نے کہا کہ ہم نے عوامی خدمت کے لئے سیاست کے میدان میں قدم رکھا مگر تیس سال مسلم لیگ ن میں گزارنے کے بعد ہمیں احساس ہو گیا کہ ن لیگ مفاد پرست افراد کا ٹولہ ہے جن کا مقصد عوامی خدمت نہیں بلکہ اپنی تجوریاں بھرنا ہے۔ تحریک انصاف نے خیبر پختونخوا میں جس تبدیلی کا وعدہ کیا عمران خان اور پرویز خٹک نے اُسے عملی جامہ پہنا کر دکھایا۔ آج تمام اداروں میں تبدیلی واضح نظر آرہی ہے۔

ان عملی اقدامات کی وجہ سے وہ اس نتیجے پر پہنچے کہ اب وقت آگیا ہے کہ ملک و قوم کی خدمت اور اصل تبدیلی کی علمبردار پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت وقت کا تقاضا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو ساتھی مسلم لیگ ن میں اُن کے ساتھ تھے آج کھلم کھلا تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کر رہے ہیں۔