بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / امریکہ کی واشنگٹن میں فلسطینی دفاتر بند کرنے کی دھمکی

امریکہ کی واشنگٹن میں فلسطینی دفاتر بند کرنے کی دھمکی


واشنگٹن۔ٹرمپ انتظامیہ نے فلسطینی لبریشن آرگنائزیشن کو دھمکی دی ہے کہ اگر اسرائیل کے ساتھ سنجیدگی سے براہ راست اور فیصلہ کن مذاکرات نہ کیے گئے تو واشنگٹن میں ان کے دفاتر بند کردیے جائیں گے۔

امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ ستمبر میں فلسطین کے صدر محمود عباس نے انٹرنیشنل کرمنل کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا کہ فلسطینیوں پراسرائیلی مظالم کے خلاف تحقیقات اور کارروائی کی جائے ، جس کے بعد امریکی قوانین کے مطابق امریکا واشنگٹن میں پی ایل او کے دفاتر بند کرنے کا حق رکھتا ہے۔

امریکی صدر 90 دن کے اندر پی ایل او مشن کے دفاتر بند کرنے کا فیصلہ کرسکتے ہیں۔امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ اگر دفاتر بند کیے گئے تو اس کا یہ ہرگز مطلب نہیں کہ امریکا فلسطین کے ساتھ سفارتی تعلقات ختم کررہا ہے۔ واشنگٹن اسرائیل اور فلسطین کے درمیان قیام امن کے لیے اقدامات جاری رکھے گا۔