بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / باتصویر ووٹرلسٹوں پر سیاسی جاعتوں کی تشویش

باتصویر ووٹرلسٹوں پر سیاسی جاعتوں کی تشویش


پشاور۔اگلے عام انتخابات میں خواتین کی تصاویر والی ووٹرلسٹوں کی امیدواروں کو حوالگی کے معاملہ پر سیاسی جماعتوں نے گہری تشویش کااظہار کرتے ہوئے فیصلہ پر نظر ثانی کامطالبہ کیاہے جبکہ پاکستان تحریک انصاف نے اس حوالہ سے صوبائی اسمبلی میں قرارداد لانے کااعلان کیاہے واضح رہے کہ نئے انتخابی قوانین کے تحت امیدوار خواتین کی تصاویر والی لسٹیں بھی حاصل کرسکیں گے۔

اس ضمن میں سیاسی جماعتوں نے مطالبہ کیاہے کہ تصاویر والی ووٹر لسٹیں صر ف انتخابی عملہ کے پاس ہونی چاہئیں تاکہ جعل سازی کی راہیں مسدودکی جاسکیں اس سلسلہ میں جے یو آئی کے صوبائی امیر مولانا گل نصیب خان نے بتایاکہ تصاویروالی لسٹوں کی فراہمی صرف عملہ کے لیے ہونی چاہیے امیدوار کو دینے سے قباحتوں کااندیشہ ہے ویسے بھی ہمارے صوبہ میں یہ ممکن نہیں ہے۔

قومی وطن پارٹی کی مرکزی سیکرٹر ی جنرل انیسہ زیب طاہرخیلی کاکہناہے کہ اس معاملہ پر ازسرنو غورکی ضرورت ہے کیونکہ ایسا کرنے سے خواتین کی رجسٹریشن کاعمل متاثرہوسکتاہے جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مشتاق احمد خان نے بتایاکہ ہمارے صوبہ کے مخصوص ماحول کے تناظر میں اس فیصلہ پرعملدرآمدمشکل ہے البتہ یہ لسٹیں عملہ کو فراہم کرنے میں کوئی قباحت نہیں ادھر پی ٹی آئی نے اس پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے اس کے خلاف صوبائی اسمبلی سے متفقہ قرارداد کی منظوری کاعندیہ دیاہے۔

پارٹی رہنما شوکت یوسفزئی کے مطابق ہماری کوشش ہوگی کہ تمام جماعتوں کو اکٹھا کرکے وفاق تک اپنی آواز پہنچائیں کیونکہ یہ معاملہ بہت ہی حساس نوعیت کاہے اور اس سے پورا انتخابی عمل متاثرہوسکتاہے ۔