بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / زرعی زمینوں پر سرکاری دفاتر کی تعمیر کی درخواستیں مسترد

زرعی زمینوں پر سرکاری دفاتر کی تعمیر کی درخواستیں مسترد


پشاور۔خیبر پختونخوا حکومت نے صوبائی کابینہ کے فیصلے کے پیش نظر متعد د محکموں کی جانب سے زرعی زمینوں پر سرکاری دفاتر اور اداروں کی تعمیرکیلئے دی گئی درخواستوں کو مسترد کردیا ہے ذرائع کے مطابق اس بات کا فیصلہ ایڈیشنل چیف سیکر ٹری کی زیر صدارت ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں ہوا جس میں متعد د سرکاری محکموں کی جانب سے زرعی زمینوں پر عمارات اور دفاتر کی تعمیر کیلئے دی گئی تجاویز اور درخواستوں پر غور کیا گیا۔

محکمہ اسٹیبلشمنٹ نے مردان، ڈی آئی خان ، سوات، بھٹہ اور کنڈی میں 70کنال اراضی پر تحقیقاتی اداروں کی تعمیر کیلئے دی گئی درخواست پر کاروائی وقتی طور پر روک دی ہے اسی طرح محکمہ کھیل کی 320کنال زرعی زمین کے حصول کی درخواست بھی مسترد کردی گئی ہے ۔اس کے علاوہ لوکل گورنمنٹ ، سپیشل کمیونیکیشن ارگنائزیشن ، محکمہ تعلیم ، محکمہ داخلہ اور صوبائی الیکشن کمیشن کی طرف سے زرعی زمینوں کے حصول کیلئے جمع کی گئی درخواستوں کومختلف مشاہدات کی بناء پر مسترد کردیا گیا ہے واضح رہے کہ صوبائی کابینہ نے زرعی زمینوں پر تعمیر پر پابندی عائد کررکھی ہے ۔