بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / اسلام آباد دھرنا ختم: جڑواں شہروں میں معمولات زندگی بحال ہونا شروع

اسلام آباد دھرنا ختم: جڑواں شہروں میں معمولات زندگی بحال ہونا شروع


اسلام آباد: حکومت اور مذہبی جماعت کے درمیان معاہدہ طے پانے کے بعد قیادت نے فیض آباد انٹرچینج پر 21 روز سے جاری دھرنا ختم کرنے کا اعلان کردیا۔

وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کے استعفے کے بعد حکومت اور مذہبی جماعت کے درمیان دھرنا ختم کرنے پر معاہدہ طے پایا جس کے بعد آج دھرنے کے قائد مولانا خادم حسین رضوی نے دھرنے کے مقام پر ہی پریس کانفرنس کرتے ہوئے دھرنا ختم کرنے کا اعلان کیا۔

 خادم حسین رضوی نے اعلان کیا کہ حکومت کے ساتھ معاہدہ طے پاگیا ہے، دوسرے شہروں کے مظاہرین پر امن طور پر گھروں کو واپس لوٹ جائیں۔

دوسری جانب دھرنا قائدین کی پریس کانفرنس براہ راست نہ دکھانے پر خادم حسین رضوی میڈیا پر برہم ہوگئے اور کہا کہ جب تک پریس کانفرنس براہ راست نہیں دکھائی جاتی، میڈیا نمائندے یہیں رہیں گے۔

دھرنا قائدین کے اس اعلان پر رینجرز کے ایک اعلیٰ افسر نے موقع پر پہنچ کر دھرنے کے شرکا سے بات چیت کی جس کے بعد میڈیا نمائندوں کو وہاں سے جانے کی اجازت دی گئی۔

فیض آباد انٹر چینج پر دھرنا ختم کرنے کے اعلان کے بعد راولپنڈی اور اسلام آباد میں معمولات زندگی بحال ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

فیض آباد کے گرد لگائی گئی تمام رکاوٹیں ہٹادی گئی ہیں، آئی جے پی روڈ، کلب روڈ اور سوہان سے بھی کنٹینر ہٹادیئے گئے تاہم ابھی مکمل طور پر راستے نہیں کھولے گئے۔

انتظامیہ کا کہنا ہےکہ دھرنے کے مقام پر صفائی کا کام جاری ہے، فیض آباد کے علاوہ تمام میٹرو اسٹیشن بحال کردیئے جائیں گے۔

راولپنڈی میں میٹرو بس سروس بحال کردی گئی ہے جب کہ مارکیٹیں بھی کھلنا شرو ع ہوگئی ہیں۔

ترجمان موٹروے پولیس کےمطابق موٹروے کے ٹریفک اور اسلام آباد ایکسپریس وے کو بھی کھول دیا گیا ہے جس کے بعد ٹریفک کی روانی معمول پر آنا شروع ہوگئی ہے۔