بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / مساجد اور مدرسوں کے خطباء کیلئے وظیفے کا پلان

مساجد اور مدرسوں کے خطباء کیلئے وظیفے کا پلان


پشاور۔سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے عقیدہ ختم نبوت کو نصاب میں شامل کرنے اور سودی کاروبار کے خاتمہ سمیت کئی دیگر اسلامی قوانین کا نفاذ کرکے اسلام کے دعویداروں کی نعرہ بازی کے برعکس اسلام کی حقیقی معنوں میں خدمت کی ہے پشتوفلموں سے بے حیائی وعریانیت کے خاتمے کیلئے بھی صوبائی اسمبلی سے جلد قانون پاس کیا جائے گا۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہار ضلع صوابی کے موضع مانکی میں 19کروڑ روپے کی لاگت سے سوئی گیس کے افتتاح اور بعد ازاں جامع ریاض العلوم کے مہتمم محمد یعقوب کی ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت کی تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ معاشرے سے سودی کاروبار کی لعنت کے خاتمے کیلئے صوبائی حکومت نے قانون سازی کی ۔جس کی روسے مذکورہ کا روبار سے منسلک افراد کو 10سال قید اور10لاکھ روپے جرمانہ ہو سکے گا۔

عقیدہ ختم نبوت صوبہ بھر میں نصاب میں شامل کیا گیا ۔جبکہ خیبر پختونخوا کے سکولوں میں پرائمری تک ناظرہ قرآن اور چھٹی سے بارہویں جماعت تک قرآن باترجمعہ پڑھانے کا نظام بھی نافذ کیا گیا ہے تاکہ طلبہ کو ابتدائی طور پر ہی اسلام سے سیر حاصل آگاہی ہو سکے اور معاشرے میں ایک خاموش انقلاب آسکے ۔اس کے علاوہ صوبائی حکومت نے دنیائے اسلام کے بلند پایہ خلیفہ حضرت عمر فاروقؓ کا یوم شہادت منانے کیلئے سرکاری چھٹی کا اعلان کیا ۔

سپیکر نے کہا کہ مسجدوں اور مدرسوں کو شمسی نظام پر منتقل کیا جارہا ہے تا کہ نمازیوں اور مدرسوں میں زیر تعلیم طلبہ کو سہولت میسر ہو سکے۔جبکہ صوبائی حکومت مسجدوں اور مدرسوں کے خطباء کیلئے سرکاری وظیفہ مقرر کرنے کا پلان بنارہی ہے۔ سپیکر نے کہا کہ نا م نہاد اسلام کے دعویداروں کا ہمارے ان اسلامی اقدامات پر بھی اعتراض ہے اور وہ مخالفانہ ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں سپیکرنے کہا کہ پشتو فلموں میں جو بے حیائی اور عریانیت دکھائی جارہی ہے۔

اس کے باعث نوجوان نسل بے راہ روی کی جانب مائل ہو رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ سب کچھ پختو ن کا کلچر کے برعکس ہے ۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت ان گھناؤنی حرکات کے خاتمے کیلئے قانون سازی کیلئے مشاورت کر رہی ہے ۔