بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / گھبرانے یا ملک چھوڑ کر جانے والا نہیں ،نواز شریف

گھبرانے یا ملک چھوڑ کر جانے والا نہیں ،نواز شریف


اسلام آباد۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اورسابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ 2018 میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا وعدہ کیا تھا لیکن ایک سال قبل ہی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا وعدہ پورا ہوگیا اسی لئے وہ کہنے پر مجبور ہوئے کہ نواز شریف صادق اور امین نہیں ہے۔ مجھے وقت سے پہلے نکال دیا گیا ہم سے حساب مانگنے والوں سے پوچھیں کہ وہ ملک کی کیا خدمت کررہے ہیں۔ مجھے نکالنے والے جج خود صادق اور امین نہیں ہیں۔

انہوں نے ڈکٹیٹر سے حلف لیا تھا۔ پیر کو نیب کورٹ سے پنجاب ہا ؤ س واپس آنے پر نواز شریف نے مسلم لیگ ن کے کارکنوں سے ملاقات کی اور کارکنوں سے خوشگوار موڈ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پانامہ کیس کا فیصلہ میرے خلاف نہیں بلکہ ملکی ترقی کے خلاف ہے،مجھے اپنے خلاف فیصلہ آنے کا علم تھا۔ انہوں نے کہا کہ آپ دیکھ رہے ہیں ہمارے ساتھ کیا ہو رہا ہے؟ نواز شریف نے اشارتاً کہا کہ انہوں نے طے کر لیا ہے کہ نواز شریف کو سزا دینی ہی ہے ، انصاف کا ترازو سب کے لیے ایک جیسا تو لیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ جو بھی کر لیں ہمیں عوام کے دلوں سے کوئی نہیں نکال سکتا ، میں گھبرانے والا نہیں ہوں ، میں مقابلہ کروں گا ۔

انہوں نے کہا کہ میں ملک چھوڑ کر جانے والا نہیں، حالات جو بھی ہوں میں ان کا مقابلہ کروں گا۔ نواز شریف نے مسکراتے ہوئے کہا ہے کہ 2018 میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا وعدہ کیا تھا لیکن ایک سال قبل ہی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا وعدہ پورا ہوگیا اسی لئے وہ کہنے پر مجبور ہوئے کہ نواز شریف صادق اور امین نہیں ہے۔ مجھے وقت سے پہلے نکال دیا گیا ہم سے حساب مانگنے والوں سے پوچھیں کہ وہ ملک کی کیا خدمت کررہے ہیں پر اس پر ہال میں موجود تما م رہنما اور کار کنان زور دار انداز میں ہنس پڑے جس سے ہال کشت زعفران بن گیا ۔ مجھے نکالنے والے جج خود صادق اور امین نہیں ہیں۔

انہوں نے ڈکٹیٹر سے حلف لیا تھا۔ اس دوران نواز شریف نے مرزا غالب کا ایک شعر بھی پڑا ۔ زندگی اپنی جب اس مشکل سے گزری غالب ، ہم بھی کیا یاد کریں گے کہ خدا رکھتے تھے ۔خیال رہے کہ نواز شریف کے خلاف احتساب عدالت میں کیسز زیر سماعت ہیں۔