بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / خواتین کا نام انتخابی فہرست میں شامل کرنیکی مہم کا آغاز

خواتین کا نام انتخابی فہرست میں شامل کرنیکی مہم کا آغاز


اسلا م آبا د۔الیکشن کمیشن نے خواتین کے قومی شناختی کارڈ کے حصول اوران کا نام بطور ووٹر انتخابی فہرستوں میں شامل کرنے کی مہم کا باضابطہ آغاز کردیا ،چیف الیکشن کمشنر آف پاکستان سردار محمد رضا نے مہم کاباقاعدہ افتتاح کیا،مہم کے تحت ملک کے 79 اضلاع کی ایسی خواتین جن کے شناختی کارڈابھی تک نہیں بنے۔

ان کے شناختی کارڈ بنوا کر ان کا نام انتخابی فہرستوں میں شامل کرنے کی کوشش کی جائے گی،چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا نے کہا ہے کہ خواتین ملک کی آبا دی نصف حصہ ہیں، تاہم انتخابی عمل میں بحیثیت ووٹر ان کی شرکت بہت کم ہے جس کی بنیادی وجہ شناختی کارڈ کا نہ ہو نا ہے ، ہم الیکشن کمیشن میں خواتین سٹاف کی تعداد بڑھانے کی کو شش کر کر رہے ہیں ، انتخابی فہرستوں میں خواتین اور مرد ووٹرز کی تعداد میں فرق ہمارے لئے بڑا چیلنج ہے ، یہ فرق کم کرنے کئے ہم خواتین کے قومی شناختی کارڈ کے حصول اوران کا نام بطور ووٹر انتخابی فہرستوں میں شامل کرنے کی مہم کا آغازکر رہے ہیں ۔

مہم اپریل2018تک جاری رہے گی۔تفصیلات کے مطابق پیر کو الیکشن کمیشن آف پاکستان نے خواتین کے قومی شناختی کارڈ کے حصول اوران کے نام بطور ووٹر انتخابی فہرستوں میں شامل کرنے کی مہم کا باضابطہ آغاز کردیا گیا الیکشن کمشنر آف پاکستان سردار محمد رضا نے مہم کاباقاعدہ افتتاح کیا۔اس مہم کے تحت 79 اضلاع جن میں اسلام آباد ،پنجاب سے 27 ، خیبر پختونخواہ سے 16، سندھ سے 24 اور بلوچستان سے 11 اضلاع کی ایسی خواتین جن کے شناختی کارڈابھی تک نہیں بنے۔

ان کے شناختی کارڈ بنوا کر ان کا نام انتخابی فہرستوں میں شامل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔یہ مہم اپریل 2018ء تک جاری رہے گی۔ افتتاہی تقریب سے خطاب کر تے ہوئے چیف الیکشن کمشنر سردار محمد رضا نے کہا خواتین ملک کی آبا دی نصف حصہ ہیں، تاہم انتخابی عمل میں ان بحیثیت ووٹر ان کی شرکت بہت کم ہے جس کی بنیادی وجہ شناختی کارڈ کا نہ ہو نا ہے انہوں نے کہا کہ ہم الیکشن کمیشن میں خواتین سٹاف کی تعداد بڑھانے کی کو شش کر کر رہے ہیں ،جبکہ ہم آنے والے انتخابات کے لئے خواتین پولنگ عملے کی تعداد بھی بڑھانے کی کو شش کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انتخابی فہرستوں میں خواتین اور مرد ووٹرز کی تعداد میں فرق ہمارے لئے بڑا چیلنج ہے ، یہ فرق کم کرنے کئے ہم خواتین کے قومی شناختی کارڈ کے حصول اوران کے نام بطور ووٹر انتخابی فہرستوں میں شامل کرنے کی مہم کا آغازکر رہے ہیں ، یہ مہم الیکشن کمیشن ، نادرا اور سول سوسائٹی آرگنائزیشنز کی مشترکہ کاوش ہے ۔ آج ہم اس مہم کا آغاز کر رہے ہیں جو اپریل2018تک جاری رہے گی۔

اس موقع پر چیرمین نادرا اور سیکریٹری الیکشن کمیشن نے بھی تقریب سے خطاب کیا ۔ چیف الیکشن کمشنر جسٹس سردار محمد رضا نے افتتاح کے بعد ان خواتین جن کے پاس شناختی کارڈ نہیں ہیں انہیں شناختی کارڈ جاری کرنے کا باقاعدہ مہم کا آغازکر دیا۔ الیکشن کمیشن کے مطابق اس سلسلے میں سول سوسائٹی آرگنا ئزیشن ، عوامی نمائندگان ، علاقہ معززین اور مذہبی رہنماؤں کا تعاون بھی حاصل کیا جائے گا تاکہ آئندہ انتخابات سے قبل خواتین کے ووٹوں کے اندراج کو یقینی بنایا جا سکے۔