بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستانی قربانیوں کا اعتراف

دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستانی قربانیوں کا اعتراف


اسلام آباد۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس سے ملاقات میں پاکستان اور امریکہ کے درمیان شراکت داری کو مزید فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ افغانستان میں امن پاکستان کے سب سے زیادہ مفاد میں ہے، افغان سرزمین کے پاکستان کے خلاف استعمال نہ ہونے کے امریکی عزم کے معترف ہیں، پاکستان میں دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہیں نہیں ۔

انٹیلی جنس بنیادوں پر آپریشن پاکستان کے مفاد میں ہے، گزشتہ چار سال کی کامیابیوں کے تسلسل کیلئے آپریشنز جاری رہیں گے جبکہ جیمز میٹس نے کہا کہ دورہ پاکستان کا مقصد طویل المدتی تعلقات کا فروغ ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں سے آگاہ ہیں اور پاکستانی فوج کی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کے معترف ہیں۔پیر کو وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے یہاں وزیر اعظم ہاؤس میں امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے ملاقات کی جہاں آمد پر وزیراعظم نے خود ان کاخیرمقدم کیا۔

ملاقات میں وزیر دفاع خرم دستگیر، وزیر خارجہ خواجہ آصف، وزیر داخلہ احسن اقبال، قومی سلامتی کے مشیر ناصر جنجوعہ، ڈی جی آئی ایس آئی اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اس موقع پر پاکستان میں تعینات امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل بھی موجود تھے۔ ملاقات کے بعد جاری مشترکہ اعلامئے کے مطابق امریکی وزیر دفاع سے گفتگو میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے دونوں ملکوں کے درمیان شراکت داری کو مزید فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں امن پاکستان کے سب سے زیادہ مفاد میں ہے۔

پاکستان اور امریکہ کے افغانستان میں امن کیلئے مشترکہ مفادات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ افغان سرزمین کے پاکستان کے خلاف استعمال نہ ہونے کے امریکی عزم کے معترف ہیں، انٹیلی جنس بنیادوں پر آپریشن پاکستان کے مفاد میں ہے، گزشتہ چار سال کی کامیابیوں کے تسلسل کیلئے آپریشنز جاری رہیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہیں نہیں ہیں، قوم دہشت گردی اور انتہاء پسندی کی تمام اقسام کے خاتمے کیلئے پرعزم ہے جبکہ امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے اس بات کا اعتراف کیا کہ ان کے دورہ پاکستان کا مقصد طویل المدت، مسلسل اور مثبت تعلقات کے فروغ کے لئے مشترکہ بنیادیں تلاش کرنا ہے ۔

جیمز نے کہاکہ ہم پاکستان سے رابطوں میں ہونے کے باعث انتہا پسندی اوردہشت گردی کے خلاف جنگ میں اس کی قربانیوں سے آگاہ ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم پاکستانی افواج کی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کے بھی معترف ہیں ۔امریکی وزیر دفاع نے خطے سے دہشتگرد ی کے خاتمے کے مشترکہ مقاصدکے حصول کے لئے تعاون کو مزید مضبوط اور مربوط بنانے کی اہمیت پر بھی زور دیا ۔