بریکنگ نیوز
Home / بزنس / وفاق سے بچے تو صوبے نے ٹیکس لگا دیا، زیروریٹنگ پر نیا تنازع

وفاق سے بچے تو صوبے نے ٹیکس لگا دیا، زیروریٹنگ پر نیا تنازع


 کراچی۔ سندھ ریونیو بورڈ نے وفاق کی جانب سے زیروریٹنگ سیلزٹیکس ریجیم کے حامل ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹری کو14 فیصد سیلزٹیکس جمع کرانے کے نوٹسز جاری کردیے ہیں جس کے نتیجے میں وفاق کی جانب سے ٹیکسٹائل سیکٹر کیلیے زیروریٹنگ سیلزٹیکس ریجیم متنازع ہوگئی ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ ایس آر بی کی جانب سے نوٹسز کے اجرا پرویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹری نے حیرانی وپریشانی کا اظہار کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی جانب سے پوری ٹیکسٹائل سپلائی چین جس میں روئی سے سوتی دھاگے سے مصنوعات کی تیاری تک کے عمل میں جننگ، ویونگ، سائزنگ، ڈائینگ، اسٹچنگ یا مشینری، کیمیکلزاورفزیکلی تیار ہونے والی ٹیکسٹائل مصنوعات کو 30 جون2016 کے ایس آراونمبر491 کے تحت زیرو ریٹ سیلزٹیکس ریجیم میں شامل کیا گیا ہے لیکن اس فیصلے کے برعکس صوبہ سندھ کی ریونیو اتھارٹی ایس آر بی نے مندرجہ بالا شعبوں اور طریقوں سے ٹیکسٹائل مصنوعات کی مینوفیکچرنگ کو خدمات کے شعبے میں شامل کرتے ہوئے 14 فیصد سیلزٹیکس عائد کردیا ہے۔

ٹاولز مینوفیکچررزایسوسی ایشن آف پاکستان نے معاملے کو حل کرنے کیلیے سندھ ریونیو بورڈکے چیئرمین عالم الدین اور وفاقی سیکریٹری ٹیکسٹائل انڈسٹری ڈویژن حسن اقبال کو خط لکھ دیا اور اس تنازع کو ایف پی سی سی آئی اور ٹریڈڈیولپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کے چیف ایگزیکٹو ایس ایم منیر کے علم میں بھی لیٹر کے ذریعے لایا گیا ہے۔