بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / سراج الحق کا پانامہ کیس پر ایک مرتبہ پھر جوڈیشل کمیشن بنانے کا مطالبہ

سراج الحق کا پانامہ کیس پر ایک مرتبہ پھر جوڈیشل کمیشن بنانے کا مطالبہ


اسلام آباد۔امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے پانامہ کیس پر ایک مرتبہ پھر جوڈیشل کمیشن بنانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سیاست کو کرپشن سے پاک کرنے کا وقت آگیا ہے،سیاسی جماعتوں کا فرض ہے کہ پانامہ کیس میں تماشائی نہ بنیں،ملک اور قوم کو کرپشن کی دلدل سے نکالنے سپریم کورٹ کی ذمہ داری ہے،حکومت پانامہ کیس میں مسلسل تاخیری حربے استعمال کر رہی ہے اور پانامہ کیس کو 2018تک لٹکانا چاہتی ہے،پانامہ کیس کو دسمبر میں ہی مکمل ہونا چاہیے۔وہ منگل کو پانامہ کیس کی سماعت کے بعد سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔

انہوں نے کہاکہ ہمارا وہی پرانا مطالبہ ہے کہ پانامہ کیس پر کمیشن بنایا جائے جس کے ٹی او آرز عدالتی عظمی بنائے۔انہوں نے کہا کہ بطور وزیراعظم نوازشریف اور ان کے خاندان کا احتساب سب سے پہلے ہونا چاہیے،کوئی بھی وزیراعظم احتساب سے بالاتر نہیں ہے،پانامہ کیس میں بہت سے کردار ہیں،سب سے پاک کیا جائے۔سراج الحق نے کہاکہ ملک و قوم کو کرپشن کی دلدل سے نکالنا سپریم کورٹ کی ذمہ داری ہے،کرپشن قومی مسئلہ بن گیا ہے،ہر کو ئی ا س سے نجات چاہتا ہے،افسوس سے کرپشن ہے خاتمے کیلئے پارلیمنٹ نے کچھ نہیں کیا،کرپشن کے خاتمے کیلئے ہمارے 4بل سردخانے میں ڈال دیئے گئے۔

سیاسی جماعتوں پر فرض ہے کہ پانامہ کیس میں تماشائی نہ بنیں،معاشرے کی اصلاح سیاستدانوں نے ہی کرنی ہے۔انہوں نے کہاکہ چاہتے ہیں کہ پانامہ کیس دسمبر میں ہی مکمل ہوجائے،جذبہ موجود ہو تو کمیشن 25دن میں تحقیقات مکمل کرسکتا ہے،حکومت کیس میں مسلسل تاخیری حربے استعمال کر رہی ہے اور چاہتی ہے کہ کیس 2018تک جائے،کیس میں نیب حکام کو بھی بلایا جائے اور پوچھا جائے کہ اتنا واقعہ ہوا ،آپ نے ایکشن کیوں نہیں لیا۔