بریکنگ نیوز
Home / پاکستان / پانامہ کے معاملے پر ہم نے داڑھی کسی اور ہاتھ میں دیدی،مسائل کاحل پارلیمنٹ ہے،خورشید شاہ

پانامہ کے معاملے پر ہم نے داڑھی کسی اور ہاتھ میں دیدی،مسائل کاحل پارلیمنٹ ہے،خورشید شاہ

اسلام آباد۔قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا ہے کہ پانامہ پیپرز کے معاملے میں ہم نے اپنی داڑھی کسی اور کے ہاتھ میں دیدی ہے ،ہمیں اس معاملے سمیت تمام مسائل پارلیمنٹ کے اندر حل کرنے چاہئیں، پارلیمنٹ ہی تمام عوامی مسائل حل کرنے کی جگہ ہے ،پیپلزپارٹی کے 4مطالبات ذاتی یا سیاسی فائدے کے لیے نہیں، حکمران پیپلز پارٹی کے مطالبات تسلیم کرنے میں ہچکچاہٹ کا شکار ہیں؟صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ ہم جنگ نہیں چاہتے اور مسئلہ کشمیر کا حل کشمیریوں کی رائے کے مطابق نکالا جائے جبکہ حکمرانوں کو کشمیر کے معاملے پر واضح پالیسی دینی چاہئے اور اسے پارلیمانی اور عوامی سیاست کا مرکز بنانا چاہیے ، جب بھی کوئی آمر آیا اس نے آمرانہ سفارت کاری کی ہے لیکن پیپلز پارٹی نے ہر فورم پر کشمیر کے مسئلہ پر آواز اٹھائی ہے جب کہ ہم پارلیمنٹ کو با اختیار بنانا چاہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی بدلتی پالیسی نے کشمیر کاز کو نقصان پہنچایا ہے اور وزیر خارجہ نہ ہونے کے وجہ سے عالمی سطح پر کشمیر کا مسئلہ متاثر ہو رہا ہے، اگر ہمارا وزیر خارجہ ہوتا تو بھارت میں پاکستان کی سبکی نہ ہوتی جب کہ اقوام متحدہ اپنی ہی قراردادوں پر عمل درآمد کیوں نہیں کرا رہی۔خورشید شاہ نے کہا کہ پانامہ لیکس میں ہم نے اپنی داڑھی کسی اور کے ہاتھ پکڑوا دی ہے، ہم پارلیمینٹ میں پانامہ سمیت تمام مسائل حل کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہمارے بہت سادے مطالبات ہیں جو پاکستان کے فائدے کے لئے ہیں اور 4 مطالبات ایسے نہیں جس سے کوئی سیاسی مقصد حاصل کیے جارہے ہوں لہذا حکمرانوں کو پیپلز پارٹی کے مطالبات تسلیم کرنے میں ہچکچاہٹ کیوں ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے دہشت گردی کے خلاف موقف اختیار کیاہے اور اس کے خلاف خلاف کمیٹی بھی بنائی۔