بریکنگ نیوز
Home / انٹرنیشنل / قاہرہ کے مرکزی چرچ میں بم دھماکہ، 25 افراد ہلاک ،35 زخمی

قاہرہ کے مرکزی چرچ میں بم دھماکہ، 25 افراد ہلاک ،35 زخمی

قاہرہ۔مصر کے دارالحکومت قاہرہ کے مرکزی چرچ میں بم دھماکے کے نتیجے میں 25 افراد ہلاک اور 35 زخمی ہوگئے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق اتوار کے روز قاہرہ کے آرتھوڈوکس عیسائیوں کے سینٹ مارکس کیتھیڈرل میں بم دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 25افرادہلاک اور 35زخمی ہوگئے ۔مرنے والوں میں خواتین بھی شامل ہیں۔

سیکورٹی حکام کا کہنا ہے کہ بم چر چ کے اندرنصب کیا گیا تھا تاہم بعض میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ بم چپل کے ذریعے اندر پھینکا گیا ۔دھماکے کے بعد زخمیوں کو فوری طور پر قریبی ہسپتالوں میں منتقل کردیا گیا جہاں بعض افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے جس سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے ۔حملے کی ذمہ داری تاحال کسی گروپ نے قبول نہیں کی تاہم شدت پسند تنظیم داعش مصر میں عبدالفتاح السیسی کی حکومت کے خلاف بر سر پیکار ہے۔

رواں ماہ کی 25 تاریخ کو عیسائی برادری کرسمس کا تہوار منائے گی اور اس منسابت سے ابھی سے ہی گرجا گھروں میں لوگوں کا رش بڑھ گیا ہے۔واضح رہے کہ دو روز قبل بھی قاہرہ میں ایک بم دھماکا ہوا تھا جس کے نتیجے میں 6 پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔یاد رہے کہ حسنی مبارک کے دور اقتدار کے خاتمے کے بعد 2011 میں مصر کے پہلے آزادانہ طور پر منتخب ہونے والے صدر محمد مرسی کو اقتدار کے صرف ایک سال بعد ہی استعفے کے مطالبہ کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

جس کے بعد جولائی 2013 میں اس وقت کے آرمی چیف اور موجودہ صدر عبد الفتح السیسی نے ان کی حکومت کا تختہ الٹ دیا تھا۔اس واقعے کے بعد سے مصر میں سیکیورٹی کی صورتحال کافی کشیدہ ہے خاص طور پر صحرائے سینا میں مخلتف شدت پسند گروپس حکومت کے خلاف سرگرم ہیں۔